کراچی میں دہشتگردوں کیخلاف آپریشن منطقی انجام تک جاری رہیگا ‘ چودھری نثار

کراچی میں دہشتگردوں کیخلاف آپریشن منطقی انجام تک جاری رہیگا ‘ چودھری نثار

اسلام آباد(آئی این پی) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ پاکستان سے دہشتگردی کے مستقل خاتمے اور امن و امان کے قیام کیلئے سول ملٹری فورسز اور انٹیلی جنس ایجنسیوں اور سیکیورٹی ایجنسیوں کے درمیان تعاون کو مزید بڑھایا جائے اور خفیہ اطلاعات کی شیئرنگ بروقت کر کے دہشت گردوں کے عزائم ناکام بنائے جائیں۔ مستقبل کے چیلنجز سے نمٹنے کیلئے جامع اور موثر حکمت عملی تیار کی جائے۔ انہوں نے یہ بات اعلیٰ سطح کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں ڈی جی اے این ایف میجر جنرل خاور حنیف‘ ڈی جی رینجرز پنجاب میجر جنرل عمر فاروق ‘ آئی جی ایف سی بلوچستان میجر جنرل شیر افگن‘ آئی جی ایف سی کے پی کے میجر جنرل ایم طیب اعظم ‘ ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل بلال اختر ‘ڈی جی کوسٹ گارڈ بریگیڈیئر شہزاد اختر‘ ڈی جی سکاؤٹ گلگت بلتستان بریگیڈیئر فاروق اعظم ‘ ڈی جی سول ڈیفنس ا ور وزارت داخلہ کے سینئر افسران نے شرکت کی ۔ اجلاس میں ملک میں امن و امان کی مجموعی صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ وزیر داخلہ نے امن و امان کیلئے سول ملٹری فورسز کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ سول ملٹری فورسز نے ملک میں امن و امان کے قیام کیلئے فعال اور موثر کردار ادا کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جن افسران اور اہلکاروں نے ملک کی حفاظت کیلئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا ہے پوری قوم ان کی قربانیوں کو سراہتی ہے۔ چوہدری نثار نے کہاکہ پاک فوج اور سول ملٹری اداروں نے مل کر دہشتگردی کے خاتمے کیلئے جو نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں ان پر پوری قوم کو فخر ہے اور جوانوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔ وزیر داخلہ نے سول ملٹری فورسز اور وزارت داخلہ کے درمیان کوآرڈینیشن کو مزید بہتر بنانے پر زور دیا انہوں نے کہاکہ وزارت کا کام اداروں کو پالیسی گائیڈ لائن دینا ہے اور اداروں کا فرض ہوتا ہے کہ وہ اس پالیسی پر عمل درآمد کرتے ہوئے اپنی کارکردگی دکھائیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اب تک سول ملٹری فورسز کیلئے 30 بلین روپے مختص کئے تھے اور ان پیسوں کو استعمال کر کے تربیت کے معیار کو مزید بہتر بنایا جا سکتا ہے۔ اجلاس میں ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل بلال اختر نے سندھ بالخصوص کراچی میں امن و امان کی صورتحال بہتر بنانے کیلئے رینجرز کی کارکردگی اور دہشت گردوں کیخلاف کامیاب آپریشن کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ میجر جنرل بلال اختر نے بتایا کہ کراچی میں جرائم پیشہ عناصر کیخلاف رینجرز نے نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں جس پر وزیر داخلہ نے رینجرز کی کارکردگی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کراچی سے اگر جرائم پیشہ عناصر کا صفایا کر دیا جائے تو اسے نہ صرف کراچی کے شہری سکون سے رہ سکیں گے بلکہ پورے ملک کی معیشت کو فائدہ پہنچے گا اور کراچی میں جاری آپریشن کو اس کے منطقی انجام تک پہنچایا جائے۔ آئی جی ایف سی بلوچستان میجر جنرل شیر افگن نے صوبے میں امن و امان کی صورتحال اور ملک دشمن عناصر کیخلاف سیکیورٹی اداروں کی کارروائیوں کے حوالے سے بریفنگ دی۔ اور بتایا کہ صوبے میں امن و امان کی صورتحال میں بہت بہتری آئی ہے ۔ دہشت گردوں اور جرائم پیشہ عناصر کیخلاف کامیاب آپریشن کئے گئے ہیں۔ آئی جی ایف سی نے بتایا کہ تعلیمی اداروں پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے اور بڑی تعداد میں جو سکول اور کالجز کے ہاسٹل بند کرا دئیے گئے تھے انہیں کھلوا دیا گیا ہے۔ انہوں نے وزیر داخلہ کو بجٹ کی کمی کی وجہ سے بعض درپیش مسائل سے بھی آگاہ کیا۔ وزیر داخلہ نے اس موقع پر کہا کہ سول آرمڈ فورسز کی کمانڈ اس وقت پروفیشنلز اور ایماندار افسران کے پاس ہے او ران کی اب تک کی کارکردگی تسلی بخش ہے۔ توقع کی جانی چاہیے کہ یہ افسران اور ان کے ماتحت عملہ اپنی کارکردگی کو مزید بہتر بنائے گا۔ انہوں نے تمام اداروں کے سربراہان سے کہا کہ وہ اپنے اداروں کی کارکردگی کے حوالے سے میڈیا کے ذریعے آگاہ کیا کریں تاکہ قوم کو بھی صورتحال کا پتہ چلتا رہے۔

مزید : صفحہ اول