پنجاب کی 37جیلوں پر دہشت گردوں کے حملے کا خطرہ وارننگ جاری

پنجاب کی 37جیلوں پر دہشت گردوں کے حملے کا خطرہ وارننگ جاری
پنجاب کی 37جیلوں پر دہشت گردوں کے حملے کا خطرہ وارننگ جاری

  


لاہور(ویب ڈیسک) خفیہ اداروں نے پنجاب کی 37جیلوں پر دہشت گردوں کے حملوں کی وارننگ جاری کردی جس پر آئی جی جیل خانہ جات میاں فاروق نذیر نے تمام ڈپٹی انسپکٹر جنرلوں کو جیلوں پر چھاپے مارنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔ ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹر سمیت دیگر افسروں نے مختلف جیلوں پر چھاپے مار کر ڈیوٹی سے غیر حاضر اور غفلت برتنے والے 11 افسران اور اہلکاروں کو معطل اور 2کے فوری تبادلے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹر میاں سالک جلال نے ڈسٹرکٹ جیل قصور پر چھاپہ مار کر ڈیوٹی میں غفلت اور لاپرواہی پر وارڈر محمد عنصر، ہیڈ وارڈر صفدر حسین اور وارڈر محمد مشتاق کو معطل کیا جبکہ سپرنٹنڈنٹ جیل کو سکیورٹی مزید بہتر کرنے کی ہدایت جاری کی گئی۔

نئی سکیورٹی وال کے ساتھ گیٹ پر ایک چوکی قائم کرنے کی بھی ہدایت کی گئی ہے اسی طرح ڈی آئی جی راولپنڈی ریجن مرزا شاہد سلیم بیگ نے 24اور25اپریل کی درمیانی شب 2بج کر 35منٹ پر ڈسٹرکٹ جیل اٹک پر چھاپہ مارا اور ڈیوٹی سے غفلت اور جیل قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر اسسٹنٹ سپرٹنڈنٹ جیل عبدالشکور اور پانچ وارڈ روں کامران شہزاد ، ساجد ندیم، بابر ندیم، غلام مرتضیٰ اور تنویر شاہ کو معطل کردیا جبکہ سکیورٹی اور روشنی کے خاطر خواہ انتظامات نہ ہونے پر سپرنٹنڈنٹ جیل کو بھی وارنگ جاری کردی۔

ڈی آئی جی لاہور ریجن ملک مبشر احمد خان نے 25اور26اپریل کی درمیانی شب ڈسٹرکٹ جیل قصور پر چھاپہ مارا اور ڈیوٹی سے غیر حاضری پر اکرم ہیڈ وارڈر اور محمد عاشق وارڈر کو فوری طور پر معطل کرنے کے احکامات جاری کردیئے۔ ڈی آئی جی انسپکشن نوید رؤف نے 24اور25اپریل کی درمیانی شب ڈسٹرکٹ جیل گجرات پر اچانک چھاپہ مارا اور سکیورٹی کے انتظامات چیک کئے۔

ڈی آئی جی فیصل آباد ریجن رانا عبدالرؤف نے 25اپریل کی صبح4بج کر15منٹ پر ڈسٹرکٹ جیل جھنگ پر اچانک چھاپہ مارا اور ڈیوٹی میں غفلت لاپرواہی اور سستی پر دو وارڈرز کو انتظامی امور پر بطور سزاء سنٹرل جیل میانوالی ٹرانسفر کردیا جبکہ سپرنٹنڈنٹ اور ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ اور ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ جیل کو سکیورٹی مزید بہتر بنانے کے لئے ہدایات جاری کیں۔

مزید : لاہور