2014-15کے دوران پاک چین تجارتی حجم میں 18.2فیصد اضاف

2014-15کے دوران پاک چین تجارتی حجم میں 18.2فیصد اضاف

  

ہ اسلام آباد (اے پی پی) عالمی اقتصادی سست روی کے باوجود گزشتہ مالی سال 2014-15ء کے دوران پاک چین دو طرفہ تجارت کے حجم میں 18.2 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ چین کی وزارت تجارت کے ایشیائی امور کے شعبہ کے ڈائریکٹر و وگاؤ کوان نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ جاری مالی سال 2015-16ء کی پہلی سہہ ماہی کے دوران بھی دوطرفہ تجارت میں گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلہ میں 10 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ اور اس دوران 4.4 ارب ڈالر کی باہمی تجارت کی گئی ہے انہوں نے کہا کہ چین ترقی پذیر ممالک کے ساتھ دو طرفہ تجارت کو بڑھانے کے لئے تجارتی عدم توازن کے خاتمہ کے لئے کام کررہا ہے انہوں نے کہا کہ سال 2000ء میں پاک چین باہمی تجارت کا حجم 5.7 ارب ڈالر تھا جو پندرہ سال کے دوران 2015ء کے اختتام تک 100.11ارب ڈالر تک بڑھ چکا ہے جبکہ اس عرصہ کے دوران دونوں دوست ممالک کے درمیان معاہدوں پر دستخط بھی کئے گئے جن کی مالیت15 سال کے دوران 1.8 ارب ڈالر سے 150.8 ارب ڈالر تک بڑھ گئی ہے انہوں نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے قیام سے نہ صرف خطے کے ممالک کی باہمی تجارت بڑھے گی بلکہ پاک چین دوطرفہ تجارت میں بھی اضافہ ہوگا۔

مزید :

کامرس -