سابق ڈی جی ایل اے کیخلاف توہین عدالت کی درخواست نمٹا دی گئی

سابق ڈی جی ایل اے کیخلاف توہین عدالت کی درخواست نمٹا دی گئی

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ میں سابق ڈی جی ایل ڈی اے احدخان چیمہ کے خلاف توہین عدالت کی درخواست نمٹادی گئی، جسٹس محمد فرخ عرفان خان نے ریمارکس دیئے کہ ایل ڈی اے لینڈ ریکارڈ کو کمپیوٹرائزڈ کرنے اور اس کی بہتری کے لئے اقدامات کو یقینی بنائے۔جسٹس محمد فرخ عرفان خان نے خاتون صبیحہ خانم کی جانب سے احد خان چیمہ کے خلاف دائرتوہین عدالت کی درخواست پر سماعت کی۔عدالتی حکم پر سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد خان چیمہ ، ایڈیشنل ڈی جی ایل ڈی اے ہاؤسنگ عمارہ خان سمیت دیگر افسران پیش ہوئے، عدالتی کارروائی شروع ہوئی تو ایڈوکیٹ جنرل شکیل احمد نے عدالت کو نئے ڈی جی ایل ڈی اے کی تقرری کا نوٹیفکیشن پیش کرتے ہوئے بتایا کہ عدالتی حکم کے مطابق نبیل جاوید کو ایل ڈی اے کا مستقل ڈائریکٹر جنرل تعینات کردیاگیا ہے۔ عدالتی فیصلے کے مطابق درخواست گزارخاتون کوبھی موہلنوال ہاؤسنگ سکیم میں پلاٹ دے دیا گیا ہے۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ایل ڈی اے شہر کا ایک اہم ادارہ ہونے کے باوجود یہاں اراضی مالکان کا ریکارڈ تک محفوظ نہیں ہے۔ انہوں نے احد چیمہ سے استفسارکیا کہ وہ چارسال تک ڈی جی ایل ڈی اے تعینات رہے۔ انہوں نے اس محکمہ کی بہتری کے لئے کیا کیا ؟ جس پر احد خان چیمہ نے عدالت کو بتایا کہ انہوں نے اس ایل ڈی اے کی بہتری کے لئے تمام اقدامات اٹھائے،کرپشن پر 122ملازمین کو برطرف کیا جو اپیل کرنے پر بھی بحال نہیں ہوئے۔ ریکارڈ کو کمپوٹرائزڈ کرنے کے لئے تھرڈ پارٹی سے معائدہ کیا ہے جس پر کام جاری ہے اورآئندہ ایک سال تک لاہورشہرکی تمام ایل ڈی اے ہاؤسنگ سکیموں کا ریکارڈ کمپیوٹرائزڈ ہوجائے گا۔عدالت نے حکم پر عمل درآمد ہونے کی صورت میں سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد خان چیمہ کے خلاف دائرتوہین عدالت کی درخواست نمٹادی۔

مزید :

علاقائی -