صوبائی دارالحکومت میں مزید 1000مقامات حساس قرار، کل تعداد 9073ہو گئی

صوبائی دارالحکومت میں مزید 1000مقامات حساس قرار، کل تعداد 9073ہو گئی

  

لا ہور (شعیب بھٹی )صوبائی دارالحکومت لاہور میں مزید 1000 مقامات کو حساس قرار دے دیا گیا، کل تعداد 9073 ہو گئی۔ماڈل ٹاؤن ڈویژن میں سب سے زیادہ حساس مقامات ہیں جن کی تعداد 2ہزار تین سو گیارہ ہے۔ صدر ڈویژن میں 2ہزار 76 مقامات کو حساس کا درجہ دیا گیا ہے۔ اقبال ٹاؤن میں ایک ہزار پانچ سو اکہتر، سٹی ڈویژن میں 12سو اور کینٹ میں حساس مقامات کی تعداد نو سو نواسی ہے، پو لیس کی جا نب سے مساجد، امام بارگاہوں، اہم عمارتوں، سینما گھر وں اور تھیٹروں کی سکیورٹی سخت بنانے کی ہدایات جاری کر دی گئیں۔تفصیلا ت کے مطا بق لاہوسا نحہ گلشن اقبال پارک کے بعد حساس اداروں نے لاہور میں غیر محفوظ اور حساس مقامات کے بارے میں رپورٹ جاری کر دی ۔ر پو رٹ کے مطا بق 8000 مقامات ایسے قرار پائے تھے جن کو براہ راست دہشت گردی کا خطرہ ہے۔ سکیورٹی اداروں نے 23 اپریل کو ایک اور لسٹ جاری کی ہے، جس میں 1000 مقامات کا اضافہ کر دیا گیا ہے جن کے بعد اب شہر میں حساس مقامات کی تعداد 9073 ہو گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق شہر میں حساس مقامات کی تعداد ایک ہزار اضافے کے ساتھ نو ہزار تہتر تک جا پہنچی۔جس کے بعد پو لیس نے مساجد، امام بارگاہوں، اہم عمارتوں، سینما گھر وں اور تھیٹروں کی سکیورٹی سخت بنانے کی ہدایات جاری کر دی گئیں۔ ان حساس مقامات میں اے پلس کیٹیگری کے 345 مقامات ہیں۔ رپورٹ موصول ہونے کے بعد پولیس نے تمام حساس مقامات پر سی سی ٹی وی کیمرے لگانے کی ہدایت جاری کر دی ہے۔ حساس مقاما ت پر اول نمبر ماڈل ٹاؤن ڈویژن میں سب سے زیادہ حساس مقامات ہیں جن کی تعداد 2ہزار تین سو گیارہ ہے۔ دوسرے نمبر صدر ڈویژن میں 2ہزار 76 مقامات کو حساس کا درجہ دیا گیا ہے۔ تیسرے نمبر پر اقبال ٹاؤن میں ایک ہزار پانچ سو اکہتر، چو تھے نمبر پر سٹی ڈویژن میں 12سو اورپا نچویں نمبر پر کینٹ میں حساس مقامات کی تعداد نو سو نواسی ہے۔ پولیس حکام کے مطابق شہر کے ان مقامات پر نہ صرف نفری تعینات کی جا رہی ہے بلکہ ان علاقوں میں گشت بھی بڑھا دیا گیا ہے۔

مزید :

علاقائی -