خطرناک ملزموں کو چھڑانے کیلئے شجاع آباد تھانہ کو بم سے اڑانے کا منصوبہ ناکام، پولیس کانسٹیبلوں سمیت 5گرفتار

خطرناک ملزموں کو چھڑانے کیلئے شجاع آباد تھانہ کو بم سے اڑانے کا منصوبہ ...

  

شجاع آباد(نمائندہ خصوصی)شجاع آباد پیشی پر آئے خطرناک سنگین وارداتوں میں ملوث ملزمان کو چھڑانے کیلئے تھانہ کو ہینڈ گرنیڈ اور بم سے اڑانے کا منصوبہ ناکام ہوگیا۔پولیس کو بروقت علم ہونے پر پولیس نے محمد یاسر کو پکڑلیا جس سے 7ایم ایم رائفل برآمد اور ہنڈا موٹرسائیکل125سی سی قبضہ میں لے لیا اور اس کے ساتھی تین ملزمان فرار ہوگئے۔پولیس ان کی گرفتاری کیلئے چھاپے مار رہی ہے پولیس نے4کانسٹیبل گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا۔تفصیل کے مطابق ملتان جیل سے شجاع آباد عدالت پیشی کیلئے رمضان عرف مانہ لنگاہ کے ساتھی قیصر کرتوانہ،اسلام کرتوانہ،قیصر ارائیں،بشیر احمد،آصف لنگاہ کوپولیس لے کر آئی ان ملزمان کو چھڑانے کیلئے پولیس بھی ملی ہوئی تھی۔مخبری ہونے پر پولیس نے ہروقت کارروائی کرتے ہوئے ایک ملزم یاسر پل کھارا کا رہائشی پکڑا گیا جبکہ عابد عرف الی اور انصر خانیوال اور فرید کھاکھی جلالپور کھاکھی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ۔گرفتار ملزم یاسر سے7ایم ایم ریوالر برآمد ہوا اور ہتھکڑیوں کی چابیاں بھی ملزم سے برآمد ہوئی۔تھانہ سٹی پولیس نے ڈیوٹی پر مامور4کانسٹیبل فرخ ،اکبر،صادق،قاسم کانسٹیبل کو گرفتار کرکے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔بتایا گیا ہے کہ ملزمان نے اپنے خطرناک ساتھیوں کو چھڑانے کیلئے پولیس کی ملی بھگت سے گرنیڈ اور بم سے تھانہ کو اڑا کر گرفتار خطرناک ملزمان کو چھڑانا تھا۔معلوم ہوا ہے کہ پولیس ملازمین سے30لاکھ میں خطرناک ملزمان کو چھڑانا تھا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -