ایس ایس پی آپریشنز کی سربراہمی میں کرائم کے حوالے سے اجلاس

ایس ایس پی آپریشنز کی سربراہمی میں کرائم کے حوالے سے اجلاس

  

پشاور (کرائمز رپورٹر)ایس ایس پی آپریشنز پشاور کی سربراہی میں پولیس لائن میں کرائم کے حوالے سے ایک میٹنگ منعقد کی گئی جس میں ایس پی کینٹ ،اے ایس پی حیات آباد،ڈی ایس پیز، ایس ایچ اوزاور پولیس افسران نے شرکت کی۔ ایس ایس پینے تعلیمی اداروں ،ہسپتالوں ، حساس مقامات کی بہتر سکیورٹی اور ڈکیتی،راہزنی کارسنچینگ و دیگر جرائم پر قابو پانے کے حوالے سے سختی سے ہدایات کی بغیر نمبر اور APL موٹرسائیکل چلانے کی منشیات اوراسلحہ کی روک تھام اس کے خلاف کاروائی اور پی ایل سی ممبران کے خدمات کا بھی جائزہ لیا گیا تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز ایس ایس پی آپریشنز پشاور عباس مجید خان مروت کی سربراہی میں پولیس لائن میں کینٹ سرکل کی مارچ کے مہینے کی کرائم کے حوالے سے میٹنگ کی گئی ۔اس دوران ڈکیتی،راہزنی کارسنچینگ و دیگر جرائم پر قابو پانے کے حوالے سے بات چیت کی گئی میٹنگ میں ایس پی کینٹ کاشف ذولفقار ،اے ایس پی حیات آباد حسن افضل،ڈی ایس پی ٹاؤن سیف اللہ خان ،ڈی ایس پی کینٹ عارف خان،ایس ایچ اوز اور دیگر پولیس افسران نے شرکت کی میٹنگ میں ایس ایس پی صاحب نے ٹارگٹ کلنگ، ڈکیتیے وراہزنی ،کارسنیچنگ اور دیگر سنگین جرائم کی روک تھام کے حوالے سے اور بھر پور کاروائیاں کرنے کی ہدایات جاری کی ۔بعض ایس ایچ اوز کو اچھی کارکردگی اور بہترین فرائض انجام دہی پر شاباش دی جبکہ کمزور پراگرس کے ایس ایچ اوز کو کاروائیاں بہتر کرنے کی ہدایات دی اور کہا کہ شکایات نہیں انا چاہیئے ایس ایس پی صاحب نے کہا کہ کینٹ سرکل کی کارکردگی سب سے اچھی ہے تمام ناکہ بندیاں مضبوط اور ہائی الرٹ رکھنا چاہیئے اس کی بدولت جرائم میں کافی حد تک کمی آسکتی ہے تعلیمی اداروں کی ہر روز ویزٹ کریں اور سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لے اشتہاری مجرمان کی گرفتاری عمل میں لائے منشیات کی سمگلمنگ کی روک تھام کیلئے عملی اقدامات کریں سرچ اینڈ سٹرائیک اپریشن ذیادہ سے ذیادہ کریں موٹر سائیکل کمپائن کریں جس پر مشکوک افراد سوار ہو روک کر تلاشی لے تمام تھانہ جات میں صفائی ،نفری اور ریکارڈ کا خاص خیال رکھیں دوران ڈیوٹی جیکٹ اور ہلمٹ کا استعمال ضروری ہے حیات آباد میں واقع ہسپتالوں کی بہترسکیورٹی انتظامات کریں۔ ایس ایس پی صاحب نے پبلک لیزان کونسل (PLC )کے ممبران کی فرائض کا جائزہ لیا گیا اور پولیس کے ساتھ جرائم کی روک تھام میں تعاون اور مدد کے حوالے سے بات چیت کی بغیر نمبر پلیٹ ،(APL ) اور بغیر رجسٹریشن موٹر سائیکل کمپائن کے بارے میں ہدایات دی پرانے کیسز میں کاروائیاں کرنے کی بھی سختی سے ہدایات دی۔ ایس ایس پی صاحب نے کہا کہ اشتہاری ملزمان ،ڈکیتی ،راہزنی،کارسنیچنگ جیسے سنگین وادتوں میں ملوث افراد کے خلاف بھر پور کاروائیاں کریں اور ایسے وارداتوں میں ملوث ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچایئے ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -