معاشرے سے نفرتیں ختم کرنا علامے کی ذمہ داری ہے :مولانا انوار الحق حقانی

معاشرے سے نفرتیں ختم کرنا علامے کی ذمہ داری ہے :مولانا انوار الحق حقانی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جامعہ اسلامیہ کلفٹن میں ختم بخاری شریف کے موقع پر عظیم الشان تقریب کا انعقاد ،ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب منعقد ہونے والی تقریب میں ملک بھر سے اکابر علماء ،معروف روحانی شخصیات، معززین شہر ، علماء، تاجر، وکلاء اور فارغ التحصیل ہونے والے طلباء کے والدین وسرپرستوں نے بھرپور شرکت کی۔تقریب رات گئے تک جاری رہی، طلباء کو انعامات سے نوازا گیا۔ جامعہ اسلامیہ کلفٹن سے اس سال 165طلباء نے سند فراغت حاصل کی۔ تقریب ختم بخاری سے وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے مرکزی نائب صدر مولانا انوار الحق حقانی، خانقاہ سراجیہ کندیاں شریف کے سجادہ نشین حضرت مولانا خواجہ خلیل احمد ،جامعہ دارالعلوم الاسلامیہ لاہور کے رئیس مولانا مشرف علی تھانوی، عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم اعلیٰ مولانا عزیز الرحمن جالندھری، جامعہ اسلامیہ کلفٹن کے ناظم عمومی مولانا مفتی ابوذر محی الدین، جامعہ اسلامیہ کلفٹن کے شیخ الحدیث مولانا جان محمد ، مولانا کمال الدین المسترشد، مفتی ابوبکر محی الدین ودیگر نے خطاب کیا اور فارغ التحصیل ہونے والے 165طلباء کرام کی دستار بندی کی گئی۔جن میں شعبہ تخصص فی الفقہ (مفتی کورس) سے 58،شعبہ عالمیہ (عالم کورس) 78اور شعبہ تحفیظ القرآن الکریم (حفظ) سے 29طلبہ شامل ہیں۔ اس موقع پر دو ایسے طلبہ کرام کو بھی خصوصی انعامات سے نوازا گیا ، جنہوں نے 8سال کے تعلیمی دورانیہ میں ایک دن بلکہ ایک پریڈ کی بھی غیر حاضری نہیں کی۔ جامعہ اسلامیہ کلفٹن کی جانب سے مذکورہ طلبہ کے لیے خطیر رقم انعام اور والدین کو عمرہ پر بھیجنے کا اعلان کیا گیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاق المدارس العربیہ کے نائب صدر مولانا انوار الحق حقانی نے کہا کہ دینی مدارس قرآن وحدیث کی تعلیمات کے سرچشمے اور نظریہ پاکستان کے محافظ ہیں، انہوں نے کہا کہ یہ فتنوں کا دور ہے اس دور میں دین کی تبلیغ کے ساتھ دینی اقدار اور دینی مدارس کی حفاظت بہت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ قرآن اور حدیث اسلام کی دو اہم ترین بنیادیں ہیں دشمنان اسلام ان بنیادوں کو مسمار کرکے دین کو نقصان پہنچانے کے درپے ہیں۔ حدیث اور سنت کے خلاف منکرین حدیث ہر دور میں کوششیں کرتے رہے ہیں مگر دینی مدارس کی برکت سے احادیث مبارکہ اور سنت نبویہؐ امت میں روز اول کی طرح زندہ ہیں، دنیا کی کوئی طاقت علوم نبویؐ کو ختم نہیں کرسکتی۔عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی ناظم اعلیٰ مولانا عزیز الرحمن جالندھری نے کہا کہ دینی تعلیم کا مقصد دنیا وآخرت کی کامیابی کا حصول ہے انہوں نے کہا کہ اسلام وحدت اور اتحاد کا داعی ہے، نوجوان علماء کی ذمہ داری ہے کہ وہ معاشرے سے نفرتیں ختم کریں، لسانی اور قومی عصبیتوں کے بت پاش پاش کرکے امت کو ایک پرچم اسلام تلے جمع کرنے کی کوشش کریں، انہوں نے کہا کہ نوجوان علماء معاشرے میں حکمت ودانائی سے کام کریں، علماء وخطباء کے انداز میں سختی کے بجائے نرمی ہوگی تو ان کا کام زیادہ موثر ثابت ہوگا، انہوں نے کہا کہ قران کریم اتحاد امت کا سب سے بڑا داعی ہے، ہر عالم دین قرآن کریم اور حدیث کے دروس پر زیادہ توجہ دے یہی اصلاح معاشرہ کا سب سے بڑا ذریعہ ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ دینی مدارس امن اور خیر کے مراکز ہیں، دینی مدارس پر دہشت گردی کا الزام لگانا اسلامی تاریخ اور اسلام کے نظام تعلیم کو جھٹلانے کے مترادف ہے۔ جامعہ دارالعلوم الاسلامیہ لاہور کے رئیس مولانا مشرف علی تھانوی نے اپنے خطاب میں کہا کہ نوجوان علماء کرام اپنے اکابر کے تابناک کردار کو سامنے رکھ کر راہ عمل متعین کریں، حدیث کی روشنی پھیلانے والوں کی خوش نصیبی یہ ہے کہ ان کی دنیا وآخرت کی بھلائی کے لیے خود نبی کریم ﷺ نے دعا فرمائی ہے، اس دعا کی برکت یہ ہے کہ علوم نبوت سے وابستہ افراد دنیا کی بڑی پریشانیوں سے محفوظ ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ قرآن وحدیث کی تعلیمات کی برکت سے معاشرے میں امن وسکون نظر آتا ہے جس معاشرے میں آسمانی تعلیمات نہیں اس کا عمومی ماحول پریشان کن ہے۔ جامعہ اسلامیہ کلفٹن کے ناظم عمومی مولانا مفتی ابوذر محی الدین نے کہا کہ دینی مدارس صالح نوجوانوں کی کھیپ تیار کرکے اصلاح معاشرہ کے لیے میدان میں اتارتے ہیں، یہ دینی مدارس کا معاشرے پر بہت بڑا احسان ہے، انہوں نے مزید کہا کہ نوجوان فضلاء عصر حاضر کے تقاضوں کو سمجھ کر امت کی رہنمائی میں اپنا کردار ادا کریں، انہوں نے مزید کہا کہ علماء خدمت خلق اور عوامی فلاح کے منصوبوں میں حصہ لے کر عوام کے دل جیت سکتے ہیں، اس لیے نوجوان فضلاء سے گزارش ہے کہ وہ معاشرے سے کٹ کر نہ رہیں اور اپنے کام کو نتیجہ خیز بنانے کے لیے معاشرے کے مختلف طبقات سے رشتے مضبوط بنائیں۔ جامعہ کے شیخ الحدیث مولانا جان محمد نے بخاری شریف کی آخری حدیث کا درس دیتے ہوئے کہا کہ مادیت کے اس دور میں روحانیت کے مرکز کو اپنا کردار موثر بنانے کے لیے محنت کرنا ہوگی تاکہ اللہ کی مخلوق دنیا والوں کی غلامی سے نکل کر اللہ کی غلامی میں آجائے۔انہوں نے کہا کہ بخاری شریف قرآن کریم کے بعد امت مسلمہ کی معتبر ترین کتاب ہے جس کے ختم کے موقع پر دعائیں قبول ہوتی ہیں۔

مزید :

کراچی صفحہ آخر -