دیگر ممالک سے قانونی معاہدے نہ ہونے کی وجہ سے پاناما لیکس پر تمام تر تحقیقات صرف ملک کے اندر ہی ہوسکتی ہیں: سلیم مانڈوی والا

دیگر ممالک سے قانونی معاہدے نہ ہونے کی وجہ سے پاناما لیکس پر تمام تر تحقیقات ...
دیگر ممالک سے قانونی معاہدے نہ ہونے کی وجہ سے پاناما لیکس پر تمام تر تحقیقات صرف ملک کے اندر ہی ہوسکتی ہیں: سلیم مانڈوی والا

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کے چیئرمین سلیم مانڈوی والا نے کہا ہے کہ پاناما لیکس پر تمام تر تحقیقات صرف ملک کے اندر ہی ہوسکتی ہیں کیونکہ پاکستان کے دیگر ملکوں کے ساتھ تحقیقات میں تعاون کے معاہدے موجود نہیں ہیں۔

نجی ٹی وی جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے سلیم مانڈوی والا کا کہنا تھا کہ پاکستان میں کوئی قانون نہیں کہ بیرون ملک سے تحقیقات کی جاسکیں جبکہ پاکستان کے دوسرے ملکوں کے ساتھ قانونی معاہدے بھی نہیں ہیں اور جب معاہدے ہی نہیں ہوں گے تو بیرون ملک تحقیقات کیسے ہونگی ؟ اس لیے پاناما لیکس پر جو بھی تحقیقات ہوسکتی ہیں وہ صرف پاکستان میں ہی ہوسکتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاناما لیکس کے معاملے کا حل احتجاج نہیں ہے جن افراد سے متعلق تحقیقات کرنا چاہتے ہیں وہ صرف پاکستان میں ہی کی جائیںدیکھنا یہ ہے کہ تحقیقات کس طرح کی ہوتی ہیں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -