سمہ سٹہ ‘ ریلوے سکول بند کرنیکی تیاریاں ‘ ٹیم ‘ اساتذہ ‘ طالبعلم ‘ والدین آمنے سامنے

  سمہ سٹہ ‘ ریلوے سکول بند کرنیکی تیاریاں ‘ ٹیم ‘ اساتذہ ‘ طالبعلم ‘ ...

  

بہاول پور(بیورورپورٹ)1936 سے قائم سمہ سٹہ سکول بندش کامعاملہ سامنے آگیا، حکم امتناعی کے باوجودریلوے حکام کاسکول کادورہ کیا ،تفصیل کے مطابق ریلوے اے ٹی او ملتان ڈویڑن اور اے ای این لودھراں نے ریلوے ہائی سکول سمہ سٹہ اور ریلوے گزلز مڈل سکول سمہ سٹہ کا اچانک دورہ کیا اور کہا کہ ہم دونوں سکولوں سیل کرنے آئے ہیں جبکہ موقع پر کلاسیں جاری تھی جنہوںنے گرلز و بوائز ہائی(بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

 سکول کے فرنیچر ز دیگر سامان کی جانچ پڑتال کرنے بعد سامان کی لسٹ تیار کی گئی کہ سکول کا تمام سامان سمیٹنے کی کوشش کی اور کہاکہ بہت جلد دونوں سکولوں مکمل بند کردیا جائے گا جس پر سکول ٹیچرز نان ٹیچنگ سٹاف ہائیکورٹ بہاولپور بینچ کے سٹے آرڈرکی کاپی دیکھائی اور کہا کہ سکول کی بندش کیخلاف بھی عدالت میں کیس دائر کیا ہوا ہے جس کا بہت جلد حکم امتناہی مل جائے گا اس موقع پر زیر تعلیم طلباءاور طالبات اور بچوں کے والدین نے بھی احتجاج کیا اور کہا کہ ہم اس سکول سے نہیں جائے گئے ہم اس سکو ل سے تعلیم حاصل کریں گے چاہے ہمیں سکول کے باہر بیٹھ کر بھی تعلیم حاصل کرنی پڑی تو کریں ہم پیچھے نہیں ہٹیں گے کہا کہ ہماری تعلیم اس فیصلے سے متاثر ہورہےں ۔ واضع رہے کہ ریلوے سکو ل سمہ سٹہ شروع سے لیکر اب تک امتحانی سنڑ بھی ہے جبکہ ابھی 2019کے میٹرک کے امتحان بھی ہوئے ہیں اورایف اے کا متحانی سنٹربھی بناہوا ہے پانچ مئی تا بارہ جون تک فرسٹ ائیر سیکنڈ ائیرکے پیپر ہونگے 248بچے فرسٹ ائیر اور200بچے سیکنڈ ایئر کے ہیں جن کی رجسٹریشن بھی ہوچکی ہے جنہیں رولنمبر سیلپ ریلوے ہائی سکول سمہ سٹہ کی جارہی ہوچکی ہیں جب تک طلباءطالبات کے پیپر نہیں ہوجاتے ریلوے انتطامیہ سکول بند کرنے کیا مجازنہیں ہے مزید انہوں نے کہا کہ اس ریلوے ہائی سکو ل کو جو 1936انگریز دور بناہے ہم اس کو بچانے آخر ی دم تک لڑیں گے کسی صور ت میں بند نہیں ہونگے دیں گے طلباءطالبات نے کہا کہ ہم اپنے سکول کی خاطر اپنی جان قربان کردیں گے مگر اپنا سکول نہیں دیں گے اور واضع رہے اس وقت کے موجودہ ایم این اے و چیئرمین وفاقی قائمہ کمیٹی برائے تعلیم میاں نجیب الدین اویسی، سابق جی ایم ریلوے انجم پرویز اور دیگر اہم شخصیات بھی اس سکول سے زیور تعلیم ہوئے ہیں لیکن انہوں نے بھی کوئی اپنا کردار ادانہیں کیا اور نہ اسمبلی میں کوئی آواز اٹھائی ہے 

دورہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -