باپ کے ہاتھوں جلائی گئی بچی15 روز بعد ہسپتال میں جاں بحق

باپ کے ہاتھوں جلائی گئی بچی15 روز بعد ہسپتال میں جاں بحق

کچا کھوہ(نمائندہ پاکستان) باپ کے ہاتھوں پٹرول چھڑک کر جلائی جانی والی بچی نمرہ بی بی نشتر ہسپتال میں دم توڑ گئی تفصیلات کے مطابق کچا کھوہ کے نواحی علاقہ 4ایٹ اے آر کے رہائشی فاترالعقل نذر حسین ہراج نے پیر کے کہنے پر گزشتہ دنوں اہل خانہ پربٹرول چھڑک کر آگ لگا کر باہر سے(بقیہ نمبر44صفحہ12پر )

 دروازہ بند کر کے فرار ہو گیا تھا چیخ وپکار پر اہل علاقہ نے باہر سے دروازہ کھول کر بچوں اور بیوی کو باہر نکالا امدادی کارروائیاں میں ریسکیوں نے پانچ بچوں اور اس کی بیوی کو ابتدائی طبی امداد کے بعد ملتان نشتر ریفر کیا جارہا تھا کہ نذرحسین کی اہلیہ پچاس سالہ مریدہ بی بی راستے میں ہی دم توڑ گئی تھی اور پانچ بچے زیر اعلاج تھے جبکہ ایک بچی نمرہ بی بی 15روز زیر علاج رہنے کے بعد زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئی ایس ایچ او مہر شوکت سنپال نے نعش کو قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کےلیے کچا کھوہ سول ہسپتال منتقل کر دیا یاد رہے کہ ملزم نزر ہراج کو مقامی پولیس نے گرفتار کرکے دہشتگردی دفعات لگا کر سنٹرل جیل منتقل کر دیا تھا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر