فراڈ کیس،انصاف کی متلاشی لیلیٰ عدالتوں کے چکر لگانے پر مجبور

فراڈ کیس،انصاف کی متلاشی لیلیٰ عدالتوں کے چکر لگانے پر مجبور

  

لاہور(فلم رپورٹر)پاکستانی معروف اداکارہ لیلیٰ کو فراڈ کیس میں تاحال انصاف نہیں مل سکا، عدالتوں کے چکر لگانے پر مجبور ہیں۔ میڈیا سے مختصر گفتگو کرتے ہوئے لیلیٰ نے بتایا کہ ایک سال سے زائد عرصہ گزرنے کے باوجود انہیں پیسے نہیں مل سکے۔انہوں نے بتایا کہ گھر خریدنے کیلئے پرارٹی ڈیلر شاہد حسین شمسی کو 2 کروڑ پانچ لاکھ ادا کئے تھے جس کے بعد ملزم غائب ہوگیا اور آج تک نہیں مل سکا۔لیلیٰ نے بتایا ایک ماہ قبل پراپرٹی ڈیلر کی اہلیہ کا فون آیا تھا کہ ان کے ساتھ بھی شوہر 25 لاکھ کا فراڈ کیا ہے۔ ملزم کی بیوی نے اسلام آباد کی ضلعی کچہری میں شوہر کیخلاف کیس دائر کیا۔عدالت کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے لیلیٰ نے کہا کہ شاہد شمسی کو دو ماہ قبل ان کی اہلیہ نے فراڈ کیس میں گرفتار کرایا تھا لیکن اہلیہ کے وکیل نے ملزم کے ساتھ پراپرٹی ڈیلر کی ضمانت کرادی ہے۔لیلیٰ نے پراپرٹی ڈیلر کو گھر خریدنے کیلئے دو کروڑ سے زائد رقم ادا کر رکھی ہے۔ لیلیٰ کا کہنا ہے کہ رقم کی ادائیگی کے باوجود گھر ان کے نام پر منتقل نہیں ہوا۔ انہوں نے ملزم کے خلاف لاہور میں مقدمہ دائر کر رکھا ہے۔اداکارہ نے مؤقف اختیار کیا کہ مذکورہ پراپرٹی ڈیلر بینک ڈیفالٹر ہے اور پیسے وصول کرنے کے باوجود گھر میرے نام پر منتقل نہیں کیا۔ گزشتہ برس فراڈ پر دلبرداشتہ ہوکر اداکارہ نے خودکشی کرنے کی کوشش بھی کی تھی۔

مزید :

کلچر -