آئی جی پنجاب پولیس کا پہلا سرکاری دورہ ،فیصل آباد پولیس نے عام سائلین کو ملاقات سے روک دیا

  آئی جی پنجاب پولیس کا پہلا سرکاری دورہ ،فیصل آباد پولیس نے عام سائلین کو ...

فیصل آباد(سپیشل رپورٹر) بطور آئی جی پولیس پنجاب کیپٹن (ر)عارف نوازخان کے فیصل آبادکے پہلے سرکاری دورہ کے موقع پر فیصل آبادڈویژن کے مختلف اضلاع سے دادرسی کے لیے آئے ہوئے عام شہریوں کو ان سے ملاقات کی اجازت نہیں دی گئی ۔ ڈیوٹی پر موجود ایک تھانیدار نے ان کی ملاقات نہ ہونے کی وجہ یہ بتائی کہ آئی جی صاحب سے ان عام شہریوں سے ملاقات کا کوئی شیڈول ہی نہیں جن سے ملاقات کا شیڈول طے کیا گیا تھا ان سے ملاقات کروادی گئی جن میں مقامی ارکان اسمبلی اور پولیس شہداءکے ورثا شامل تھے ۔ نئے آئی جی گزشتہ روز اپنے باضابطہ سرکاری دورہ کے موقع پر جب آر پی او آفس فیصل آبادپہنچے تو وہاں سکیورٹی کے سخت انتظامات تھے کسی بھی غیر متعلقہ شخص یا عام شہری کو ان تک پہنچنے سے روک دیا گیا۔مختلف مقامات سے آئے ہوئے وہ سائلین جو مقامی پولیس سے مایوس ہو کر اپنی شکایات لے کر پنجاب پولیس کے سربراہ تک پہنچنے کی کوشش کررہے تھے ان میں نذیر ،ساجد ،عابد ،ناصرہ بی بی ،فردوس آرا وغیرہ شامل تھے ۔ جن کا کہنا تھا کہ وہ آئی جی پولیس پنجاب کے دورہ فیصل آباد کا سن کر آر پی او آفس پہنچے تھے جوان کی مقامی پولیس کے خلاف ایکشن اور دادرسی کی آخری امید تھی جو دم توڑ گئی اور وہ مایوس ہو کر اپنے گھروں کو واپس لوٹ گئے۔اس دوران جب سائلین نے آرپی او آفس کا سکیورٹی حصار توڑنے کی کوشش کی تو اُنہیں زبر دستی پیچھے دھکیل دیا گیا۔

آئی جی پنجاب

مزید : صفحہ آخر