چڑھتے سورج کو سلام کرنا علماء حق کا کام نہیں،اشرفجلالی

چڑھتے سورج کو سلام کرنا علماء حق کا کام نہیں،اشرفجلالی

  

لاہور(سٹی رپورٹر) تحریک لبیک یا رسول اللہ صلی اللہ علیک وسلم کے سربراہ و تحریک صراط مستقیم کے بانی ڈاکٹر محمد اشرف آصف جلالی نے کہا: علمائے حق کی راہوں کا گرد و غبار تاج شاہی کے نگینوں سے زیادہ نکھار رکھتا ہے۔چند نام نہاد علماء کی وجہ سے پہلے اسلام کو غریب الوطن کرنے کا ایجنڈا لایا گیا اور اب مساجد سے بھی اسلام کے اخراج کی راہیں تلاش کی جارہی ہیں۔ ہر چڑھتے سورج کو سلام کرنا علمائے ربانی کا کام نہیں ہے۔ حکمرانوں کی قصیدہ خوانی کرنے والے دین کی نگہبانی کا منصب کھو بیٹھتے ہیں۔

لبرل میڈیا اور بے حیائی کے سوداگر علماء دونوں ہی اسلامی معاشرے کے لیے ایک بہت بڑا روگ ہیں۔ جو مبلّغ چوک میں ننگے بدن شرم و حیاء کے فضائل بیان کر رہا ہو اس کی تبلیغ کو تبلیغ کہنا بھی دین دشمنی ہے۔ اسلامی شعائر کے خلاف بولنے والے اینکر اور طارق جمیل جیسے فنکار ایک ہی کھوٹے سکے کے دو رخ ہیں۔ ان کی آپس کی توتکار نورا کشتی ہے۔ ایک گھڑی امر بالمعروف اور نہی عن المنکر کا فریضہ سر انجام دینے کے لیے ساری عمر اپنی سیرت و کردار کو بے داغ رکھنا پڑتا ہے۔ جو لوگ اپنے قلم اور زبان کا تقدس چند ٹکوں کے عوض فروخت کر دیں ان کا ضمیر مردہ ہو جاتا ہے۔ غریب الوطن اسلام کو اپنے کردار میں جگہ دینے والے کے اعزاز کے سامنے چاندی کی چمک دمک ماند ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -