مولان فضل الرحمن پر سرگرم، شہباز شریف، بلاول، اچکزئی میاں افتخار سے ٹیلیفونک رابطے

  مولان فضل الرحمن پر سرگرم، شہباز شریف، بلاول، اچکزئی میاں افتخار سے ...

  

اسلام آباد ( سٹاف رپورٹر،این این آئی)جمعیت علمائے اسلام(ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان ایک بار پھر سر گرم ہو گئے، قائد حزب اختلاف محمد شہباز شریف سمیت دیگر رہنماؤں سے ٹیلیفونک رابطے کر کے اٹھارویں ترمیم سمیت مجموعی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔ بتایا گیا ہے کہ مولانا فضل الرحمان نے شہباز شریف،محمود خان اچکزئی اور میاں افتخار سے ٹیلیفون پر رابطہ کر کے ملک کی مجموعی صورتحال اور خصوصاً اٹھارویں ترمیم میں رد و بدل کے حوالے سے سامنے آنے والی اطلاعات پر تبادلہ خیال کیا۔ رہنماؤں نے کہا کہ اٹھارویں ترمیم میں ردوبدل کسی صورت میں قابل قبول نہیں ہوگا،اپوزیشن جماعتیں اٹھارویں ترمیم ردوبدل کی بھرپور مخالفت کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اٹھارویں ترمیم کے ساتھ چھیڑ چھاڑ سے باز رہے۔بعد ازاں پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور جمعیت علمائے اسلام (ف)کے امیر مولانا فضل الرحمان کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا جس دوران دونوں رہنماؤں نے 18ویں آئینی ترمیم کے تحفظ کے حوالے سے اتفاق کیا۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ جمہوری قوتیں 18ویں آئینی ترمیم پر کسی صورت کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گی،ملک کرونا وائرس کی وجہ سے سنگین حالات سے گزررہا ہے، وفاق آئین سے چھیڑچھاڑ کے بجائے صوبوں کی مدد کرے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ،ہم نے 18ویں آئینی ترمیم کے ذریعے دستور کو اس کی اصل شکل میں بحال کیا،ہم 18ویں آئینی ترمیم کے خاتمے کے حوالے سے کسی بھی کوشش کو برداشت نہیں کریں گے۔بلاول بھٹو زرداری اور مولانا فضل الرحمان میں 18ویں آئینی ترمیم کے تحفظ کے حوالے سے اتفاق ہوا۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ملک کرونا وائرس کی وجہ سے سنگین حالات سے گزررہا ہے، وفاق آئین سے چھیڑچھاڑ کے بجائے صوبوں کی مدد کرے۔

فضل الرحمن

مزید :

صفحہ اول -