ہائیکورٹ کا خواجہ انور مجید کی میڈیکل رپورٹ فراہم نہ کرنے پر نیب افسر سے اظہار برہمی

        ہائیکورٹ کا خواجہ انور مجید کی میڈیکل رپورٹ فراہم نہ کرنے پر نیب افسر ...

  

اسلام آباد (این این آئی)اسلام آباد ہائیکورٹ نے خواجہ انور مجید کی میڈیکل گراؤنڈز پر ضمانت کی درخواست پر سماعت کے دور ان نیب کی جانب سے میڈیکل رپورٹ فراہم نہ کرنے پر برہمی کا اظہارکیا ہے۔ سماعت جسٹس عامرفاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویڑن بینچ نے کی۔ دور ان سماعت نیب کی جانب سے میڈیکل رپورٹ فراہم نہ کرنے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا۔ تفتیشی افسر نے بتایاکہ لاک ڈاؤن کے باعث فلائٹس بند ہیں، اس لیے ممکن نہیں ہو سکا۔جسٹس محسن اختر کیانی نے کہاکہ کراچی نیب آفس کو کہا جا سکتا تھا، میڈیکل رپورٹ نیب نے دینی ہے یا ڈاکٹرزنے دینی ہے۔جسٹس عامر فاروق نے کہاکہ آپ کو توہین عدالت کا نوٹس نہ دے دیں، آپ بھی جا کے جیلوں کے حالات دیکھ لیں۔جسٹس عامر فاروق نے کہاکہ اگلے ہفتہ تک کا ٹائم دے رہے ہیں، میڈیکل رپورٹ نہ آئی تو آپ جیل جانے کیلئے تیار رہیے گا۔ وکیل صفائی نے کہاکہ نیب کورٹ کیلئے میڈیکل رپورٹ منگوا لی گئی یہاں کیلئے نہیں منگوائی گئی،رپورٹ میں لکھا ہوا ہے کہ خواجہ انور کی طبعیت انتہائی ناساز ہے، ملزم جس ہسپتال میں ہے وہاں کے 3 ڈاکٹرز کورونا کے شکار ہو چکے ہیں،عمر کے اس حصہ میں خواجہ انور مجید کیلئے کورونا وائرس سے زیادہ خطرہ ہے۔ بعد ازاں کیس کی سماعت 4 مئی تک ملتوی کر دی گئی۔

خواجہ انور مجید

مزید :

صفحہ آخر -