بلاول ملک کو بدنام کرنے کی سازش کر رہے ہیں، حلیم عادل شیخ

  بلاول ملک کو بدنام کرنے کی سازش کر رہے ہیں، حلیم عادل شیخ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف مرکزی نائب صدر و سندھ اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ نیمیڈیا کے لئے جاری کردہ اپنے وڈیو بیان میں کہا ہے کہ بہت ہی افسوس کی بات ملک کے حالات خراب ہوتے ہوئے بھی بلاول زرداری ملک کو بدنام کرنے کی سازش کر رہے بلاول زرداری بی بی سی کو انٹرویو دینے کے بجائے عوام میں موجود ہوتے۔ وزیر اعظم پر صوبوں سے لاتعلقی کا الزام لگانے سے پہلے بلاول زرداری کو اپنے وزیر اعلیٰ سے پوچھ لینا چاہیئے تھا کیا وزیراعلیٰ سندھ این سی سی کی میٹنگ اسلام کا حصہ نہیں ہوتے؟ بین الاقوامی سطح پر اس طرح کا پروپیگینڈا کرنا کرونا سے بچاؤ نہیں ملک کو بدنام کرنے کے لئے ہے۔جبکہ نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی کے اجلاس میں تمام صوبوں کو مکمل نمائندگی دی جاتی ہے۔ بلاول زرداری کی معلومات میں کمی ہے۔ سندھ کی اسپتالوں کو سپریم کورٹ کے حکم پر وفاقی حکومت کے حوالے کیا گیا تھا۔ بڑے بڑے دعوے کرنے والی سندھ حکومت آج بھی جناح اور سول اسپتال میں کرونا کی ٹیسٹنگ اور علاج کی سہولت نہیں دے سکی ہے۔ شرح آبادی کے حساب سے سب سے زیادہ کرونا کا مرض سندھ میں پھیلا ہوا ہے۔ مراد علی شاہ نے لاک ڈاؤن سے پہلے بیس لاکھ خاندانوں کو راشن دینے اور گھر گھر ٹیسٹ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ وہ دعوا سب بھاشن ہی رہ سکا لیکن عوام کو راشن نہ مل سکا۔ سندھ میں لاک ڈاؤن گرفتاریوں مقدمات ہونے باوجود کوئی اچھا رزلٹ نکلا؟ بلاول زرداری کے نزدیک سونے کے تاج پہنے والے موجود ہیں جن کو عوام کے مسائل سے دلچسپی نہیں ہے۔ خانصاحب کی پالیسیز پر ابہام اور الزام لگانے سے پہلے بتائیں سندھ حکومت کی کیا پالیسی ہے۔ سندھ حکومت بڑے بڑے اعلانات کے سوا کوئی کام بتائے جس سے عوام کو رلیف دیا ہو۔ 18 ترمین کے تحت محکمہ صحت کئی سال سے سندھ حکومت کے پاس۔ اس سال بھی 140 ارب کا بجیٹ ہے مگر سندھ کے سولہ اضلاع میں ایک بھی وینٹیلیٹر نہیں ہے۔ سندھ میں اگر پرائیوٹ اسپتال نہ ہوتے تو سندھ میں کرونا سے نمٹنے کی صلاحیت ہی نہیں ہے۔ بڑے افسوس کی بات ہے کہ آئے دن بلاول زرادری بین اقوامی نیوز ادروں سے بات کر کے ملک کو بدنام کر رہے ہیں۔ لیکن سندھ کی چھ کروڑ عوام آپ سے جواب مانگ رہی ہے کہ لاک ڈاؤن کے بعد آپ نے کیا رلیف دیا۔ وفاقی حکومت نے سب سے پہلے سندھ کو ایک کروڑ ڈالر دیئے 1200 ارب کے پیکیج میں سب سے زیادہ فائدہ سندھ کو ہوا۔144 ارب کے احساس کیش ایمرجنسی پروگرام میں سب سے زیادہ سندھ کی عوام کو رلیف دیا گیا۔ سندھ میں 20 لاکھ لوگوں کو 25 ارب روپے دیئے جاچکے ہیں۔ مزید دیئے جارہے ہیں۔بلاول زرداری بھی بیانات دینے سے قبل اپنے نمائندؤں کو سندھ کی عوام کے پاس بھیجیں۔ خود بھی انٹرویو دینے کے بجائے عوام میں آئیں سندھ کی عوام سراپا احتجاج ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مرتضی وہاب نے ایف آئی کو تاجروں کی آڈیو لیک کی تحقیقات کے لئے خط لکھا ہے اس کی مکمل انکوائری کرائی جائے۔ ایف آئی اے کو دائرہ تحقیقات بڑھانا چاہیے اربوں کا راشن کہاں گیا وہ بھی پتہ لگایا جائے۔ وزیر اعلی سندھ نے خوف کیوں پھیلایا اس کی بھی تحقیقات ہونی چاہئے لاک ڈاؤن کے نام پر اربوں کا راشن کہان تقسیم ہوا کس کی مدد کی گئی۔ احساس کیش ایمرجنسی پروگرام کو بھی سندھ میں خراب کرنے کی سازش کی گئی۔ یپلزپارٹی کے لوگوں کو اپنے گریبان میں پہلے دیکھنا چاہیے۔ شہر کراچی میں آپ لوگوں پر بہت سے الزامات ہیں۔ شہر کراچی میں لیاری گینگ آپ بنا چکے ہیں جس کی سرپرستی آپ کو رہنماؤں نے کی۔ شہر میں قتل و غارت بھتہ گیری سار کچھ اس لیاری گینگ وار کی امن کمیٹی نے کیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -