روزہ داروں کی کی مشکلات کے پیش نظر تندوروں کو پابندی سے مستثنی قرار دیا: اجمل وزیر

روزہ داروں کی کی مشکلات کے پیش نظر تندوروں کو پابندی سے مستثنی قرار دیا: اجمل ...

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے مشیر برائے اطلاعات و تعلقاتِ عامہ اجمل خان وزیر نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے روزہ داروں کی مشکلات کے پیش نظر صوبہ بھر میں ہتھ ریڑھی اور تندوروں کو 4 بجے کے بعد پابندی سے مستثنیٰ قرار دیا ہے اور اس سلسلے میں حکومت کی جانب سے با قاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام مشکل فیصلے عوام کے تحفظ اور فائدے کے لیے کیے جا رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز اطلاع سیل، سول سیکرٹریٹ پشاور میں میڈیا کو کورونا صورتحال پر بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔مشیر اطلاعات نے کورونا کی تازہ صورتحال بتاتے ہو ئے کہا کہ خیبر پختونخوا میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 71 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جس سے کورونا مریضوں کی مجموعی تعداد 1864 ہوگئی ہے۔ جبکہ گزشتہ 24گھنٹوں میں 5 اموات بھی ریکارڈ ہوئیں جس سے اموات کی کل تعداد 98 ہوگئی ہے۔ اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ گزشتہ ایک دن میں 30 کورونا مریض صحت یاب ہو گئے ہیں اسی طرح کورونا کو شکست دینے والے مریضوں کی مجموعی تعداد 515 ہو گئی ہے۔مشیر اطلاعات نے کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے حکومتی اقدامات کے بارے میں تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخوا حکومت نے کوروناوائرس سے نمٹنے کے لئے صوبہ بھرکے49 ہسپتالوں کے طبی عملے کے لئے مزیدحفاظتی سامان بھی بھیج دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت طبی عملے کو تمام تر ضروری سامان ترجیحی بنیادوں پر فراہم کر رہی ہے۔ موجودہ صورتحال میں ڈاکٹروں و دیگر طبی عملے کی خدمات کو سراہتے ہوئے اجمل وزیر نے کہا کہ ڈاکٹرز اور دیگر طبی عملہ ہمارے ہیروز ہیں اور انکی حفاظت حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ قبائلی اضلاع میں احساس ایمر جنسی کیش پروگرام کے بارے میں انہوں نے بتایا کہ شمالی اور جنوبی وزیر ستان کا ڈیٹا مکمل ہوگیا ہے اب تیزی سے وہاں کے مستحقین کو کیش فراہم کیا جارہا ہے اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کے تحت صوبائی حکومت کی طرف سے بھی کیش فراہمی کا سلسلہ جلد شروع ہوجائیگا۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی طرف سے تین مہینوں کے یکمشت 6000 روپے فراہم کیے جائینگے۔ مشیر اطلاعات نے کہا کہ علماء کرام کورونا کے خلاف حکومت کیساتھ ایک پیج پر ہیں۔علماء کرام، طبی ماہرین کی طرف سے سماجی دوری سمیت تمام احتیاطی تدابیر سے بھی متفق ہیں۔اجمل وزیر نے کہا کہ بہت جلد علماء کرام پر مشتمل کمیٹی کیساتھ میڈیا کو بریفنگ دی جاے گی۔مشیر اطلاعات نے کہا کہ وزیر اعلیٰ محمود خان خود فرنٹ لائن پر موجود ہیں اور تمام انتظامات کی نگرانی کررہے ہیں اور مو جودہ صورتحال پر تمام متعلقہ محکموں سے روزانہ کی بنیاد پر بریفنگ لے رہے ہیں۔کورونا وبا سے نمٹنے کے لیے احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے پر زور دیتے ہوئے مشیر اطلاعات نے کہا کہ اس بیماری کا علاج صرف اور صرف احتیاط ہے، احتیاط ہی کے ذریعے کورونا کا قلع قمع ہو سکتا ہے انہوں نے کہا کہ یہ بیماری خود کسی کے پیچھے نہیں آتی ہے جب تک آپ خود باہر سے اسے گھر نہیں لے کے آتے۔ اس لئے عوام سے درخواست ہے کہ گھر پر رہیں اور باہر نکلنے سے پرہیز کریں اگر نکلنا بہت زیادہ ضروری ہو تو سماجی دوری اور ماسک پہننے سمیت تمام احتیاطی تدابیر پر عمل کریں۔

مزید :

صفحہ اول -