سعودی عرب میں زیرِ تعلیم پاکستانی طلباء نے بھی وطن واپس لانے کا مطالبہ کردیا

سعودی عرب میں زیرِ تعلیم پاکستانی طلباء نے بھی وطن واپس لانے کا مطالبہ کردیا
سعودی عرب میں زیرِ تعلیم پاکستانی طلباء نے بھی وطن واپس لانے کا مطالبہ کردیا

  

ریاض (وقار نسیم وامق) سعودی عرب میں زیر تعلیم پاکستانی طلباء کا کہنا ہے کہ حکومت پاکستان کو چاہئیے کہ وہ ہماری وطن واپسی کے لئے سعودی حکومت کو اجازت فراہم کرے تاکہ ہم اپنی سالانہ تعطیلات پاکستان میں گزار سکیں جبکہ پندرہ رمضان کو ہمارے ہاسٹل بھی بند ہو رہے ہیں.

سعودی عرب کی سات مختلف یونیورسٹیوں میں زیرِتعلیم پاکستانی طلباء نے حکومتِ پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ سعودی حکومت کو اجازت فراہم کرے تاکہ چار سو سے زائد طلباء کی اپنے وطن واپسی ممکن ہوسکے، طلباء نے آن لائن کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ سعودی عرب میں زیرِتعلیم پاکستانی طلباء کو سعودی گورنمنٹ سفری سہولیات فراہم کر رہی ہے اور سعودی ائیر لائن کے ذریعے انہیں پاکستان روانہ کرے گی اور تمام طلباء کو کورونا وائرس سمیت کسی قسم کی کوئی دوسری بیماری بھی لاحق نہیں ہے.

طلباء نے مزید کہا کہ ہم حکومتِ پاکستان کی پالیسی کے مطابق قرنطینہ میں بھی رہنے کو تیار ہیں اور اگر ہماری واپسی ممکن نا بنائی گئی تو پندرہ رمضان المبارک کو ہاسٹل کی بندش کے بعد ہمارے لئے مشکلات میں مزید اضافہ ہو جاے گا جبکہ دیگر تمام ممالک اپنے طلباء کو واپس لے جاچکے ہیں، ہم گزشتہ ایک ماہ سے سعودی عرب میں سفارت خانہ پاکستان قونصل خانہ اور پاکستانی وزارتِ خارجہ سے رابطے میں ہیں مگر ہماری گزارشات کو نہیں سنا جا رہا.

مزید :

عرب دنیا -