سپریم کورٹ کاڈاکٹر کو مستقل اور پمز میں ضم کرنے کا حکم،دو سال کے واجبات بھی ادا کرنے کا حکم

سپریم کورٹ کاڈاکٹر کو مستقل اور پمز میں ضم کرنے کا حکم،دو سال کے واجبات بھی ...
سپریم کورٹ کاڈاکٹر کو مستقل اور پمز میں ضم کرنے کا حکم،دو سال کے واجبات بھی ادا کرنے کا حکم

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے پمز ہسپتال کے ڈاکٹر مجاہد رضا کو مستقل اور پمز میں ضم کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہاکہ حکومت درخواست گزار کو گزشتہ دو سال کے واجبات بھی ادا کرے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں پمزہسپتال کے ڈاکٹر کی مستقلی کے کیس کی سماعت ہوئی،عدالت نے کہاکہ حقائق سے ثابت ہوتا ہے کہ درخواست گزار کی پمز میں تعیناتی قانون کے مطابق ہوئی،دیگر ڈاکٹروں کو بھی ڈیپارٹمنٹل پروموشن کمیٹی کی سفارشات کے بغیر مستقل کیا گیا،درخواست گزار نے دس سال پمزہسپتال میں خدمات سر انجام دی ہیں۔

عدالت نے کہاکہ درخواست گزار کوگزشتہ دو سال سے کام نہیں کرنے دیا جا رہا، فریق مخالف کے مطابق درخواست گزار کی سنیارٹی غیر قانونی ہے،درخواست گزار کی سنیارٹی چارج سنبھالنے کی تاریخ سے شروع ہو گی۔

عدالت نے پمز ہسپتال کے ڈاکٹر مجاہد رضا کو مستقل اور پمز میں ضم کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہاکہ حکومت درخواست گزار کو گزشتہ دو سال کے واجبات بھی ادا کرے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -