ڈونلڈ ٹرمپ کی گفتگو سن کر خاتون اپنے کھانے پر ڈیٹول چھڑک کر کھا گئی

ڈونلڈ ٹرمپ کی گفتگو سن کر خاتون اپنے کھانے پر ڈیٹول چھڑک کر کھا گئی
ڈونلڈ ٹرمپ کی گفتگو سن کر خاتون اپنے کھانے پر ڈیٹول چھڑک کر کھا گئی

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے گزشتہ دنوں سائنسدانوں کو مشورہ دیا تھا کہ وہ ڈیٹول جیسی جراثیم کش ادویات کورونا وائرس کے مریضوں کے جسم میں داخل کرنے کا طریقہ ڈھونڈیں اور تجربہ کریں کہ اس سے کورونا وائرس ختم ہوتا ہے یا نہیں۔ صدر ٹرمپ کی یہ بات سن کر ایک برطانوی خاتون اپنے کھانے پر ڈیٹول چھڑک کر کھا گئی۔ ڈیلی سٹار کے مطابق سیاسی تجزیہ کار کیوین میگوئر نے اپنے ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر صدر ٹرمپ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اس برطانوی خاتون کی حرکت کا انکشاف کیا ہے۔

کیوین میگوئر نے لکھا کہ ”ایک ہیلتھ سنٹر کے ورکر نے مجھے بتایا ہے کہ صدر ٹرمپ کی ویڈیو دیکھنے کے بعد ایک خاتون نے کھانے پر ڈیٹول چھڑک کر کھا لیا ہے اور اسے تشویشناک حالت میں ہیلتھ سنٹر لایا گیا ہے۔صدر ٹرمپ کی احمقانہ باتیں برطانیہ کو بھی متاثر کر رہی ہیں۔“ واضح رہے کہ اس سے قبل صدر ٹرمپ نے ملیریا کی دوا ہائیڈروکسی کلوروکوئین کو کورونا وائرس کا علاج قرار دیا تھا جس پر لوگوں نے غلطی سے ’کلوروکوئین‘ نامی کیمیکل کھانا شروع کر دیا اور اس سے کئی اموات ہوئیں۔ بعد ازاں تحقیقات میں معلوم ہوا کہ ہائیڈروکسی کلوروکوئین کا بھی کورونا وائرس کے حوالے سے کوئی فائدہ نہیں بلکہ الٹے کئی نقصانات ہیں اور یہ دوا کھانے سے کورونا وائرس کے مریضوں کی موت ہونے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

مزید :

برطانیہ -