کینسر کا شکار ہونے کا خطرہ کم کرنے کے لیے وہ آسان تبدیلیاں جو آپ کو اپنی زندگی میں فوری کر لینی چاہئیں

کینسر کا شکار ہونے کا خطرہ کم کرنے کے لیے وہ آسان تبدیلیاں جو آپ کو اپنی زندگی ...
کینسر کا شکار ہونے کا خطرہ کم کرنے کے لیے وہ آسان تبدیلیاں جو آپ کو اپنی زندگی میں فوری کر لینی چاہئیں

  

کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) کینسر ایک جان لیوا مرض ہے لیکن آسٹریلوی سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اگر ہم اپنی خوراک اور طرز زندگی میں کچھ آسان تبدیلیاں کر لیں تو کینسر لاحق ہونے کا خطرہ بہت حد تک کم کیا جا سکتا ہے۔ دی مرر کے مطابق اس تحقیق میں سائنسدانوں نے پہلی تبدیلی یہ بتائی ہے کہ اپنی روزمرہ خوراک میں خشک میوہ ’فور برازیل نٹس‘ (four brazil nuts)شامل کر لیں۔ برازیل نٹس میں منرل سیلینیم بھرپور مقدار میں پایا جاتا ہے جو مثانے، پراسٹیٹ اور جلد کے کینسر کے خطرے کو کم کرتا ہے۔ اگر جسم میں سیلینیم کی زیادہ مقدار موجود ہو تو جلد کے کینسر کا خطرہ 60فیصد تک کم ہو جاتا ہے۔

سائنسدانوں کے مطابق دوسری تبدیلی یہ کریں کہ روزانہ چار سے پانچ کپ کافی پینی شروع کر دیں۔ تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ روزانہ 5کپ کافی پینے سے باﺅل کینسر (bowel cancer)کا خطرہ 40فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔ روزانہ چار کپ کافی پینے سے منہ اور گلے کے کینسر کا خطرہ 39فیصد کم ہو جاتا ہے، جبکہ 2کپ کافی پینے سے جگر کے کینسر کا خطرہ ایک تہائی کم ہو جاتا ہے۔

تیسری تبدیلی یہ لائیں کہ روزانہ 10سے 15منٹ سورج کی روشنی میں گزاریں۔ اس طرح آپ کے جسم میں وٹامن ڈی کی کمی نہیں ہو گی اورجاپانی سائنسدانوں نے اپنی ایک تحقیق میں بتایا ہے کہ اگر آپ کے جسم میں وٹامن ڈی کی وافر مقدار موجود رہے تو آپ کو جگر کا کینسر لاحق ہونے کا خطرہ 50فیصد تک کم ہو جاتا ہے۔ اس کے علاوہ باقی ہر طرح کے کینسر کا خطرہ بھی 20فیصد تک کم ہو جاتا ہے۔ایک تبدیلی اپنے ناشتے میں لائیں اور روزانہ ناشتے میں دہی کا استعمال کریں۔ اس سے پھیپھڑوں کے کینسر کا خطرہ 20فیصد کم ہو جاتا ہے۔

ماہرین نے چوتھی تبدیلی یہ بتائی ہے کہ سفید بریڈ اور چاولوں کی جگہ براﺅن بریڈ اور چاول استعمال کریں۔ کینسر ریسرچ برطانیہ کے ماہرین کی 25تحقیقات میں معلوم ہوا ہے کہ روزانہ ہر 10گرام غذائی فائبر لینے سے باﺅل کینسر کا خطرہ 10فیصد کم ہو جاتا ہے۔ اگر آپ روزانہ 30گرام فائبر کی حامل اشیاء(براﺅن بریڈ اور چاول)کھاتے ہیں تو آپ کو باﺅل کینسر لاحق ہونے کا خطرہ 30فیصد کم ہو گا۔

اپنی غذا میں پانچویں تبدیلی یہ لائیں کہ ہفتے میں تین دن مچھلی لازمی کھائیں۔ یونیورسٹی آف آکسفورڈ کے سائنسدانوں کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ جو لوگ باقاعدگی سے مچھلی کھاتے ہیں انہیں باﺅل کینسر کا خطرہ 12فیصد تک کم ہوتا ہے۔ چھٹی تبدیلی ماہرین نے یہ بتائی ہے کہ اپنی خوراک میں لہسن کو لازمی حصہ بنائیں، کیونکہ چینی سائنسدانوں کی ایک تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ ہفتے میں دو بار کچا لہسن کھانے سے پھیپھڑوں کا کینسر لاحق ہونے کا خطرہ 44فیصد کم ہو جاتا ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -