چینی بحران حتمی رپورٹ لٹکنا شروع؟ وفاقی کابینہ نے وہ فیصلہ کرلیا جو اپوزیشن کو بالکل بھی پسند نہ آئے

چینی بحران حتمی رپورٹ لٹکنا شروع؟ وفاقی کابینہ نے وہ فیصلہ کرلیا جو اپوزیشن ...
چینی بحران حتمی رپورٹ لٹکنا شروع؟ وفاقی کابینہ نے وہ فیصلہ کرلیا جو اپوزیشن کو بالکل بھی پسند نہ آئے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی کابینہ کی جانب سے چینی بحران کی تحقیقات کرنے والے انکوائری کمیشن کو مزید تین ہفتے کی مہلت دے دی گئی ہے۔

وزیر اعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا ویڈیو لنک اجلاس ہوا جس میں مختلف امور پر غور کیا گیا ۔ اجلاس کے دوران وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے چینی انکوائری کمیشن سے متعلق کابینہ کو بریفنگ دی جس کے بعد کابینہ نے چینی بحران پر انکوائری کمیشن کو مزید تین ہفتے دینے کی منظوری دے دی۔

خیال رہے کہ چینی انکوائری کمیشن نے 25 اپریل کو فرانزک آڈٹ رپورٹ جمع کرانا تھی لیکن عین وقت پر یہ خبریں سامنے آئی تھیں کہ کمیشن کو 2 ہفتے کی مہلت دے دی گئی ہے جبکہ اب یہ مہلت تین ہفتے کردی گئی ہے۔

علاوہ ازیں وفاقی کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی  اور کورونا پر قائم قومی رابطہ کمیٹی کے فیصلوں کی توثیق کردی۔ کابینہ نے لاک ڈاؤن 9 مئی تک بڑھانے کے فیصلے ، قانونی مقدمات سے متعلق کابینہ کی کمیٹی کے فیصلوں کی بھی توثیق کردی۔

وفاقی کابینہ نے  مسابقتی کمیشن کے قائم مقام چیئرپرسن کی تعیناتی، متعدد لمیٹڈ کمپنیوں میں ڈائریکٹرزکی خالی اسامیوں پر نامزدگیوں، پاکستان پیٹرولیم کمپنی، سوئی نادرن گیس، پاکستان منرل ڈویلپمنٹ، آئل اینڈگیس کمپنی میں نامزدگیوں اور مالیاتی معاہدوں سے متعلق بلز 2020 کی منظوری دے دی۔

مزید :

قومی -