پاکستان اور بھارت کی خواتین ٹیموں کے درمیان پوائنٹس کی یکساں تقسیم کا فیصلہ، پی سی بی کا فیصلے کیخلاف اپیل میں نہ جانے کا امکان، حیران کن خبر آ گئی

پاکستان اور بھارت کی خواتین ٹیموں کے درمیان پوائنٹس کی یکساں تقسیم کا فیصلہ، ...
پاکستان اور بھارت کی خواتین ٹیموں کے درمیان پوائنٹس کی یکساں تقسیم کا فیصلہ، پی سی بی کا فیصلے کیخلاف اپیل میں نہ جانے کا امکان، حیران کن خبر آ گئی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی جانب سے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی ویمنز کرکٹ چیمپین شپ کے پوائنٹس پاکستان اور بھارت کی خواتین ٹیموں کے درمیان یکساں تقسیم کرنے کے فیصلے کے خلاف اپیل میں نہ جانے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی ویمنز کرکٹ چیمپین شپ میں گزشتہ برس پاکستان اور بھارت کی ویمن ٹیموں کے درمیان تین ون ڈے میچز کی سیریز کھیلی جانی تھی اور سیریز کی میزبانی بھارت نے کرنا تھی لیکن حکومت کی جانب سے اجازت نہ ملنے پر بھارتی کرکٹ بورڈ نے پاکستان کرکٹ ٹیم کی میزبانی کرنے کی حامی نہ بھری اور اس طرح سیریز ممکن نہ ہوسکی۔

پی سی بی نے آئی سی سی سے رابطہ کیا اور اپنا مو قف پیش کیا تو آئی سی سی ٹیکنیکل کمیٹی نے 15 اپریل کو فیصلہ سناتے ہوئے دونوں ٹیموں کو 3، 3 پوائنٹس یکساں تقسیم کر دئیے جس کے باعث بھارتی ویمن کرکٹ ٹیم اگلے برس نیوزی لینڈ میں کھیلے جانے والے ورلڈکپ میں براہ راست کوالیفائی کرنے میں کامیاب ہو گئی جبکہ تین پوائنٹس ملنے کے باوجود پاکستان ٹیم براہ راست کوالیفائی نہ کر سکی اور اب جولائی میں کوالیفائنگ راونڈز کھیلے گی۔ 

پی سی بی نے آئی سی سی کے اس فیصلے پر حیرت کا اظہار کیا تھا تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ بورڈ آئی سی سی کے اس فیصلے کے خلاف اپیل نہیں کرے گا بلکہ مناسب فورم پر معاملے کو اٹھائے گا اور اس حوالے سے جلد فیصلہ سامنے آجائے گا۔پی سی بی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ آئی سی سی نے 15 اپریل کو فیصلہ سنایا اور پی سی بی کے پاس 21 روز کے اندر اپیل کا حق ہے، اس طرح پی سی بی کے پاس ابھی وقت ہے جس کے باعث تمام تر قانونی پہلوؤں کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

مزید :

کھیل -