پارلیمینٹ کے فیصلوں سے الگ کوئی بھی طریقہ ملک کیلئے خطرناک ہو گا، عبدالغفور

پارلیمینٹ کے فیصلوں سے الگ کوئی بھی طریقہ ملک کیلئے خطرناک ہو گا، عبدالغفور

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ؒٓؒٓٓلاہور(نمائندہ خصوصی(جمعیت علماءاسلام کے مر کزی سیکر ٹری جنرل سابق اپوزیشن لیڈر سنیٹر مو لا نا عبد الغفور حیدری نے کہا کہ ہمارا پہلے دن سے یہ مطالبہ ہے کہ فیصلے ملک وقوم کے مفاد میں کیئے جائیں لیکن سابقہ اور مو جو دہ حکمرانوں کو ملک قوم کے بجائے بیرونی مفادات عزیز ہیں حکمران آنکھیں بند کر کے فیصلے کر نے کی روش نے ملکف نازک موڑ پر لا کھڑا کیا ہے ڈرون حملوں میں مسلسل اضافے نیٹو افواج بے گناہ لو گو ں کو مارکر عالمی قوانین اور انسانی حقوق کی دھجیاں اڑارہی ہے انہوں نے کہا کہ پا کستان کے احتجاج کا امریکہ نے جواب ڈرون حملوں کی صورت میں دیا ہے انہوں نے کہا کہ حکمران اورادارے سوچیں کہ نیٹو سپلائی بحال کر نے کی صورت میں انھیں ڈرون حملوں کا تحفہ دیا گیاہے ۔انہوں نے کہا کہ خفیہ تعلقات کا نتیجہ بھیانک سامنے ارہا ہے انہوں نے کہا کہ پارلیمینٹ کے فیصلوں سے الگ کوئی بھی طریقہ ملک وقوم کے لیے خطر ناک ہو گا ان خےالات کا اظہار انہوں نے پارٹی راہنماوں سے گفتگو کر تے ہوئے کےا اس موقع مو لا نا محمد امجد خان ،مو لا نا مفتی ابراراحمد،مو لا نا ڈاکٹر عتیق الرحمن،عبد الجلیل جان،محمد اسلم غوری،مو لا نا خلیل الرحمن درخواستی ،محمد اقبال اعوان،قاری ثناءاللہ اور دیگر مو جود تھے ۔مو لا ناحیدری نے کہا کہ ملک نازک موڑ پر کھڑا ہے انہوں نے کہا کہ بھارت نے تمام دریاﺅں کا پانی بند کر دیا ہے اور دوسری طرف تجارت کی بات کر تا ہے انہوں نے کہا کہ بتر تعلقات کے لیے بھارت کو دوغلی پا لیسی چھوڑ نا ہو گی انہوں نے کہا کہ بھارت سے تعلقات کی قوم مخالف نہیں ہے لیکن تعلقات کے لیے دونوں اطراف کاجذبہ درکار ہے اب تک صرف پاکستان نے ہی جذبہ دکھا یا ہے جبکہ بھارت صرف تجارت کی بات کر تا ہے ۔

مزید :

ایڈیشن 1 -