ہائیکورٹ، سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کیلئے دو ججز پر مشتمل کمیشن کے قیام اور دھرنے ختم کرانے کی درخواست مسترد

ہائیکورٹ، سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کیلئے دو ججز پر مشتمل کمیشن کے قیام اور ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کیلئے ہائیکورٹ کے دو ججز پر مشتمل کمیشن کے قیام اوراسلام آباد میں دھرنے ختم کرانے کی درخواست واپس لینے کی بنیاد پر مسترد کر دی ۔لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے امجد محمود ایڈووکیٹ کی طرف سے دائر درخواست پر سماعت کی، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات لاہور ہائیکورٹ کے سنگل جج مسٹر جسٹس علی باقر نجفی پر مشتمل ٹربیونل نے کی ہیں لیکن اس کے باوجود سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے حقائق منظر عام پر ہیں لائے جا سکے،درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ لاہور ہائیکورٹ کے دو ججز پر مشتمل جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے اور نئے سرے سے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی تحقیقات کرے اور کمیشن کی کارروائی کے دوران اسلام آباد میں جاری دھرنوں کو روکا جائے ،ابتدائی سماعت کے دوران جسٹس منصور علی شاہ نے درخواست گزار سے کہا کہ دھرنوں سے متعلق درخواستیں پہلے ہیں ہائیکورٹ کے فل بنچ کے روبرو زیر سماعت ہیں لہذا درخواست گزار کو وہاں رجوع کرنا چاہیے، درخواست گزار وکیل نے استدعا کی انہیں درخواست واپس لینے کی اجازت دی جائے جس منظور کرتے ہوئے عدالت نے درخواست واپس لینے کی بنیاد پر مسترد کر دی ۔

درخواست مسترد

مزید : صفحہ آخر