شام میں بین الاقوامی مبصرین کی نگرانی میں انتخابات کا امکان مسترد

شام میں بین الاقوامی مبصرین کی نگرانی میں انتخابات کا امکان مسترد

  

دمشق (اے پی پی) شام کے صدر بشار الاسد نے ملک کی 4 سالہ خانہ جنگی کے دوران بیرونی مداخلت پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔ دمشق کے صدارتی محل میں دئیے گئے اپنے ایک انٹر ویو میں شامی صدر نے کہا کہ مستقبل میں ہونے والے انتخابات کے دوران وہ بین الاقوامی مبصرین کو آنے کی اجازت نہیں دیں گے۔اْنہوں نے کہا کہ بین الاقوامی نگرانی میں انتخابات کا انعقاد شام کے اقتدارِ اعلیٰ میں مداخلت کے مترادف ہے۔

شام کے تنازعہ کا حل صرف اْسی صورت میں نکل سکتا ہے جب شام کے خلاف کی جانے والی سازش میں ملوث ملک ایسا کرنا اور شام میں خونریزی کو بڑھانا بند کریں گے ۔بشارالاسد نے واضح کیا کہ جب بیرون ممالک کی جانب سے شام میں دہشت گردی کے لیے بھیجی جانے والی رقوم کی فراہی بند ہو گی تب حتمی حل کی جانب بڑھا جا سکے گا۔اسد نے سوالیہ انداز میں بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ کون سا بین الاقوامی ادارہ ہے جو ہمیں اچھی طرز حکمرانی کا سرٹیفیکیٹ دے گا۔

مزید :

عالمی منظر -