تحفظ ناموس رسالت قانون میں ترمیم برداشت نہیں کریں گے،مولانا جمیل الرحمن

تحفظ ناموس رسالت قانون میں ترمیم برداشت نہیں کریں گے،مولانا جمیل الرحمن

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کی دعوت پر شمالی لاہور کے علماء کرام کا تربیتی کنونشن جامع مسجد رحیمیہ حنفیہ پرانا دھوبی گھاٹ لاہور میں عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت لاہور کے سرپرست مولانا قاری جمیل الرحمن اخترکی صدارت میں ہوااجلاس میں عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی رہنما مولانا عزیزالرحمن ثانی ،مولانا عبدالشکور حقانی،پیر میاں محمدرضوان نفیس،مولانا سید ضیا ء الحسن شاہ ،قاری گلزاراحمد،قاری نذیراحمد،مولانا اعجازاحمد،مولانا عبدالنعیم ،مولانا قاری ظہورالحق ،مولانا خالد محمود ،مولانا عبدالوحید قریشی ،مولاناحافظ اخلاق احمد،مولانا خالد عابد ، حافظ عمر فاروق،مولانا اعجاز احمد ، مولاناحفیظ الرحمن ، مو لا نا سیدعبداللہ شاہ،قاری عبدالعزیز سمیت کئی علماء کرام نے شرکت کی ،تربیتی کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مولانا عزیزالرحمن ثانی نے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت دین کا اساسی اور بنیادی عقیدہ ہے ،قرآن میں ایک سو مرتبہ اور احادیث میں دوسو دس مرتبہ عقیدہ ختم نبوت کی اہمیت اور فضیلت کو بیان کیا۔

گیا ہے۔عقیدہ ختم نبوت اور ناموس رسالت کی حفاظت کے لیے امت مسلمہ نے ہمیشہ اتحاد واتفاق کا مظاہرہ کیا ہے عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کے لیے بارہ سو صحابہ کرام نے جام شہادت نوش کیا ہے،جن میں سات سو صحابہ کرام قرآن حافظ تھے اورستربدری صحابہ بھی ان شہداء ختم نبوت میں شامل تھے۔ تحفظ ناموس رسالت قانون میں تبدیلی ہرگزبرداشت نہیں کریں گے قاری جمیل الرحمن اخترنے کہاکہ اسلام کے نام پر بننے والے ملک میں ناموس رسالت ایکٹ کے خلاف ہر سازش کا مقابلہ کیا جائے گاناموس رسالت کا قانون تمام انبیاء کرام کی عزت اور ناموس کی حفاظت کا دربان اور چوکیدار ہے

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -