جسٹس مظاہر علی کی سماعت کے لئے فل بنچ تشکیل کی سفارش

جسٹس مظاہر علی کی سماعت کے لئے فل بنچ تشکیل کی سفارش

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے رجسٹرارہائیکورٹ کی جانب سے درخواستوں پر اعتراض عائدکرنے کے عدالتی اختیارات استعمال کرنے کے خلاف دائر درخواست کی سماعت کے لئے فل بنچ تشکیل دینے کی سفارش کر دی ہے۔یہ درخواست اے کے ڈوگر نے دائر کررکھی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ آئین کے تحت حاصل بنیادی حقوق کی خلاف ورزی پرعدالت عالیہ میں آئین کے آرٹیکل 199کے تحت دائر ہونے والی آئینی پٹیشنز پر رجسٹرار کی جانب سے اعتراضات عائد کر دئیے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ رجسٹرار کی جانب سے اعتراضات عائد کیا جانا عدالتی معاملات میں مداخلت ہے ،درخواست کو قابل سماعت قرار دینا یا نہ دینا عدالت عالیہ کا اختیار ہے مگر اس کے باوجود رجسٹرار نے اپنے آفس کے کلرکوں کو یہ اختیار تفویض کر رکھا ہے۔انہوں نے عدالت کو بتایا کہ رجسٹرار آفس کی جانب سے آئینی درخواستوں پر عائد اعتراضات سے انصاف کی راہ میں بلا جواز رکاوٹ کھڑی کی گئی ہے جس سے انصاف میں تاخیر واقع ہوتی ہے جس پر جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی نے درخواست فل بنچ کے روبرو سماعت کے لئے بھجوانے کی سفارش کرتے ہوئے پٹیشن واپس چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو بھجوا دی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -