(6) حدود عرفات کے اندر وقوف کرنا فرض ہے

(6) حدود عرفات کے اندر وقوف کرنا فرض ہے

  

چھٹی بات یہ ہے کہ عرفات کی حدود میں وقوف کرنا فرض ہے،بعض حجاج جو انفرادی طور پر حج کرتے ہیں،اسی طرح بعض معلم اپنی کسی ضرورت ، مجبوری یا نادانی کی وجہ سے بعض حاجیوں کے خیمے حدود عرفات سے باہر لگا دیتے ہیں ، حالانکہ عرفات کی حدود کے اندر وقوف کرنا فرض ہے۔ اگر کوئی حاجی بالکل بھی عرفات کے میدان کے اندر نہیں آیا تو اس کا حج نہیں ہوا۔

مزدلفہ کیلئے روانگی: غروب آفتاب کے بعد نماز مغرب پڑھے بغیر عرفات سے مزدلفہ کے لئے روانہ ہوں گے ،وہاں پرپہنچ کرپہلا کام آپ کو یہ کرنا ہے کہ اگر عشاء کا وقت ہو گیا ہو تو مغرب اور عشاء کی دونوں نمازیں ملا کر پڑھیں ، چاہے تنہاء نماز ادا کریں یا جماعت سے پڑھیں ،یہا ں بہرصورت ملا کر پڑھنا واجب ہے ۔

مزید :

ایڈیشن 1 -