نوجوان لڑکی جو ایک دن میں کئی لیٹر کوکاکولا پی جایا کرتی تھی، عادت سے چھٹکارا پانے کے چند ماہ بعد ہی صحت میں کیا تبدیلی آئی؟ آپ کو بھی یقین نہ آئے گا

نوجوان لڑکی جو ایک دن میں کئی لیٹر کوکاکولا پی جایا کرتی تھی، عادت سے چھٹکارا ...
نوجوان لڑکی جو ایک دن میں کئی لیٹر کوکاکولا پی جایا کرتی تھی، عادت سے چھٹکارا پانے کے چند ماہ بعد ہی صحت میں کیا تبدیلی آئی؟ آپ کو بھی یقین نہ آئے گا

  

لندن (نیوز ڈیسک) سافٹ ڈرنکس کا نشہ ہمارے جسم کو کس طرح تباہ کرتا ہے اور ان سے بچ کر ہم کس طرح کھوئی ہوئی صحت دوبارہ پاسکتے ہیں، سارہ ٹرنر نامی خاتون کی کہانی ہمیں یہ سب کچھ بتاتی ہے۔

سارا کہتی ہیں کہ وہ کوکاکولا کی اس حد تک عادی ہوگئیں کہ ایک وقت ایسا بھی آیا کہ وہ روزانہ 4 لیٹر کوکاکولا پیتی تھیں اور اس سے کم پر ان کا گزارہ نہ تھا۔ اخبار ’’دی مرر‘‘ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ سافٹ ڈرنک کی نشے کی حد تک عادی ہونے کا نتیجہ یہ ہوا کہ ان کا وزن بڑھتے بڑھتے 111 کلوگرام تک پہنچ گیا، اور اس کی بنیادی وجہ اس مشروب میں پائے جانے والے میٹھے کی بھاری مقدار تھی۔ انہوں نے بتایا ’’مجھے اپنا وزن بڑھنے کا سب سے بڑا غم یہ تھا کہ میں اپنے ننھے بچوں کے ساتھ کھیلنے کے قابل بھی نہ رہی تھی۔ میں تو انہیں پارک تک بھی لے کر نہیں جاسکتی تھی۔‘‘

سارہ نے اپنی دلچسپ کہانی سناتے ہوئے بتایا کہ جب انہوں نے اپنے بچوں کی آنکھوں میں مایوسی دیکھی تو فیصلہ کیا کہ وہ دوبارہ کولا ڈرنک کو ہاتھ نہیں لگائیں گی۔ اس فیصلے نے واقعی ان کی زندگی بدل دی۔ آج اس بات کو ایک سال گزرچکا ہے کہ انہوں نے کوئی بھی کولا ڈرنک نہیں پیا اور آپ حیران ہوں گے کہ آج ان کا وزن 111 کلوگرام نہیں بلکہ صرف 57 کلوگرام ہے۔ وہ کہتی ہیں ’’میں نے کولا ڈرنکس مکمل طور پر چھوڑ دئیے اور اپنی خوراک میں بھی کمی کی۔ آج میرے لئے سب سے بڑی خوشی یہ ہے کہ میں اپنے بچوں کی خوشی کا خیال رکھ سکتی ہوں، اور آپ کو بھی نصیحت کرتی ہوں کہ ان مشروبات سے پرہیز کریں ورنہ بہت دردناک حالات دیکھنے پڑ سکتے ہیں۔‘‘

مزید :

تعلیم و صحت -