اوکاڑہ سانگلا ہل ،ٹریفک حادثات میاں بیوی اور بچوں سمیت 8افراد جاں بحق

اوکاڑہ سانگلا ہل ،ٹریفک حادثات میاں بیوی اور بچوں سمیت 8افراد جاں بحق

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اوکاڑہ ،ننکانہ، سانگلہ ہل(بیورورپورٹ، ڈسٹرکٹ رپورٹر، نمائندہ خصوصی، تحصیل رپورٹر) اوکاڑہ جبوکہ روڈ پر ٹریکٹر ٹرالی اور موٹر سائیکل کے مابین تصادم میں میاں بیوی سمیت چار افراد جاں بحق جبکہ سانگلہ ہل کے قریب ریلوے پھاٹک رکھ برانچ نہرمیں سواریوں سے بھرا رکشہ تیز رفتاری کے باعث بے قابو ہوکر گرنے سے 35سالہ خاتون اور اسکی 3بچیاں جاں بحق ہوگئیں۔ تفصیلات کے مطابق اوکاڑہ کے نواحی گاؤں 18/GDکا رہائشی ظفر اقبال اپنی بیوی فرزانہ بی بی اور کمسن بچے مدثر اور رشتہ دار خاتون رضیہ زوجہ مظفر کے ہمراہ مو ٹر سائیکل پر سوار ہو کر اپنے عزیزوں کو ملنے کے لئے براستہ جبوکہ روڈ اوکاڑہ آرہا تھا،کہ راستہ میں کھڑی ہو ئی ٹریکٹر ٹرالی سے موٹر سائیکل ٹکراگئی،حادثہ کے نتیجہ میں چار وں افراد مو قع پر ہی جاں بحق ہو گئے ،ریسکیو1122جائے حادثہ پر پہنچ گئیں،ورثاء نعشوں کو کسی کاروائی کے بغیر آبائی گاؤ ں لے گئے ،گاؤں میں کہرا بر پا ہو گیا،پولیس نے حادثہ کی تحقیقات شروع کر دی۔دوسری جانبسانگلہ ہل کے قریب رکھ برانچ کینال روڈ پر ریلوے پھاٹک کے قریب تیز رفتار رکشہ بے قابو ہوکر نہر رکھ برانچ میں گر گیا،جس کے نتیجہ میں ایک 35سالہ عورت کلثوم بی بی زوجہ محمد ریاض اور 3 بچیاں 14سالہ مدیحہ دختر محمد نواز،8سالہ ایمان فاطمہ دختر محمد ریاض اور6سالہ مناہل دختر امتیاز جاں بحق ہو گئیں،کلثوم بی بی ، 6 سالہ بچی مناہل اور 14سالہ مدیحہ کی نعشیں نہر سے نکال لی گئیں،جبکہ 8سالہ ایمان فاطمہ کی نعش کی تلاش جاری رہی مگر نہ مل سکی،ریسکیو1122کی ٹیم اور درجنوں نوجوان نہر پر پہنچ گئے اور شام تک تلاش کرتے رہے مگر نعش نہ مل سکی،اندھیرا چھا جانے پر آپریشن روک دیا گیا ،رکشہ ڈرائیورامتیاز،ایک شخص محمد نواز اور2خواتین کو زندہ نکال لیا گیا ،بتایا گیا ہے کہ منڈی مڑھ بلوچاں کا رہائشی محمد نواز جٹ اپنی فیملی کے ہمراہ فیصل آباد سے شادی کی تقریب میں شرکت کے بعد واپس سانگلاہل آئے ،جہاں سے موٹر سائیکل رکشہ بک کراکے مڑھ بلوچاں جارہے تھے، ریلوے پھاٹک نہر رکھ برانچ کے قریب سواریوں سے بھرا رکشہ تیز رفتاری کے باعث بے قابو ہوکرنہر میں جاگرا ،جس کے نتیجہ میں رکشہ ڈرائیور سمیت 8افراد ڈوب گئے،راہگیروں نے نہر میں چھلانگیں لگا کر رکشہ ڈرائیور،مسافر محمد نواز اور2خواتین کو زندہ نکال کیا،جبکہ ایک عورت کلثوم بی بی،6سالہ مناہل اور 14سالہ مدیحہ کی نعشیں نکال لی گئیں،ایمان فاطمہ کی نعش برآمد نہیں ہوسکی،حادثہ کی اطلاع ملنے پر میاں اعجازز حسین بھٹی ایم پی اے، ڈی ایس پی اشفاق سلطان رانا،انچارج تھانہ سٹی حسن عمران سید بھاری نفری کے ہمراہ موقعہ پر پہنچ گئے اور ریسکیو آپریشن کی نگرانی کی،بعد ازاں میاں اعجاز حسین بھٹی ایم پی اے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال پہنچ گئے اور ایم ایس کو ضروری کارروائی جلد نمٹانے کی ہدائت کی۔

مزید :

صفحہ آخر -