علماء کرام کی جانب سے آزادی کشمیر مارچ کی حمایت جاری

علماء کرام کی جانب سے آزادی کشمیر مارچ کی حمایت جاری

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی کی جانب سے اتوار یکم ستمبر کو شاہراہ فیصل پر 3بجے دن ہونے والے ”آزادی ئ کشمیر مارچ“ کے سلسلے میں مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام سے ملاقاتوں اور رابطوں کا سلسلہ جاری ہے۔ امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے جامعۃ الرشید کے مہتمم مفتی عبد الرحیم سے ملاقات کی اور ان کو مارچ میں شر کت کی دعوت دی۔ ملاقات میں نائب امیر کراچی برجیس احمد، امیر ضلع شمالی محمد یوسف اور جمعیت اتحاد العلماء کراچی کے ناظم اعلیٰ مولانا عبد الوحید بھی موجود تھے۔ مفتی عبد الرحیم نے آزادی ئ کشمیر مارچ کی مکمل حمایت اور تائید کرتے ہوئے اسے انتہائی اہم اور بروقت قراردیا اور کہا کہ موجودہ حالات میں بھارت کی بڑھتی ہوئی جارحیت کے خلاف ضروری ہے کہ مکمل اتحاد ویکجہتی کا اظہار کیا جائے اور کشمیریوں کو عالمی سطح پر یہ مقام دیا جائے کہ کشمیری عوام تنہا نہیں ہیں پاکستانی قوم ان کے ساتھ ہے۔ حافظ نعیم الرحمن نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں ڈھائے جانے والے مظالم اور ریاستی جبر و تشدد کی مکمل تفصیلات دنیا کے سامنے نہیں آرہی ہیں۔ ہماری حکومت کی ذمہ داری ہے کہ بھارت کا اصل چہرہ عالمی سطح پر بے نقاب کیا جائے اور کشمیریوں کے حقوق سلب کرنے اور اقوامِ متحدہ کی قراردادوں پر عمل درآمد نہ ہونے کے حوالے سے عالمی فورمز پر مسئلہ اُٹھایا جائے۔ اس کے لیے عوامی سطح پر دباؤ پیدا کرنے کی بھی ضرورت ہے تاکہ ہمارے حکمران وہ فیصلے کر یں جو کشمیریوں کے لیے ان حالات میں کرنے چاہیئے۔اس موقع پر حافظ نعیم الرحمن نے جامعۃ الرشید کے میڈیا ہاؤس کا بھی دورہ کیا اور میڈیا ہاؤس کو مسئلہ کشمیر اور کراچی کے حالات پر تفصیلی انٹرویو دیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -