چارسالہ ڈگری والے ہومیو پیتھک ڈاکٹروں کی بھرتی بند

چارسالہ ڈگری والے ہومیو پیتھک ڈاکٹروں کی بھرتی بند

  

لاہور (سٹی رپورٹر)نیشنل کونسل آف ہومیو پیتھی سے الحاق شدہ چار سالہ ڈی ایچ ایم ایس ڈگری کرنے والے ہومیو پیتھک ڈاکٹرز کی گریڈ 15سے 19تک بھرتی بند کر دی گئی ہے۔ اس حوالے سے روزنامہ پاکستان کے نمائندے سے گفتگو کر تے ہوئے نور ہومیو پیتھک کالج، پاکستان ہو میو پیتھک کالج اور افضل ہو میو پیتھک کالج کے پرنسپلزکا کہنا تھا کہ پورے پاکستان میں 140ہومیو پیتھک کالجز اور ڈیرھ لاکھ ہومیو پیتھک ڈاکٹرز رجسٹرد ہیں جن کا کوئی مستقبل نہیں اسی وجہ سے ان ڈاکٹروں میں سے ہی کچھ ڈاکٹرز غیر قانونی کام کرنے پر مجبور ہیں اور لوگوں کا علاج ہومیو پیتھک دواؤں کی بجائے ایلوپیتھک ادویات سے کر رہے ہیں جو کہ غیر قانونی ہونے کے ساتھ ساتھ لوگوں کی زندگیوں سے کھیلنے کے مترادف ہے۔ حکومت کو چاہئے کہ صرف بارہ ہزار سالانہ دینے کی بجائے ہومیو پیتھک کے مستقبل کو سامنے رکھتے ہوئے ان ڈاکٹروں کیلئے مناسب سروس اسٹکچر ترتیب دے تاکہ یہ ڈاکٹر غیر قانونی حرکات کرنے سے اجتناب کریں۔

۔ اس کے علاوہ گزشتہ دنوں پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن کے مطابق لاہور میں 174مختلف کلینکس پر چھاپہ مارا گیا جن میں سے 55کلینکس کو معیار پر پورا نہ اترنے کی وجہ سے سیل کر دیا گیا۔ ان میں 28عام فزیشن،14ہڈی جوڑ و نیم حکیم، 5ڈینٹسٹ،4لیبارٹریز اور 2میڈیکل و ہومیو پیتھک کلینک سیل کیے گئے۔ سیل شدہ کلینکس میں سے 49کلینکس ایسے تھے جو اپنا الگ کاروبار بھی تھا۔ سپریم کورٹ آف پاکستان کی ہدایت پر پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن نے 11,881مختلف ہیلتھ سنٹرز کا دورہ کیا جن میں سے 4458ہیلتھ سنٹرز حکومتی معیار پر پورا نہ اترنے کے سبب سیل کر دیے گئے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -