عقیدہ ختم نبوت اسلامی تعلیمات کی اسا س ہے،مولانا عزیز الرحمن

  عقیدہ ختم نبوت اسلامی تعلیمات کی اسا س ہے،مولانا عزیز الرحمن

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)21ستمبرتحفظ ختم نبوت کانفرنس وحدت روڈ کی تیاری کے سلسلے میں تحفظ ختم نبوت علماء کنونشنز مدرسہ انوارالقرآن منہالہ،سبزہ زار،قصور اور کوٹ رادھا کشن میں منعقد ہوئے،کنونشنز میں عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے مرکزی رہنما مولانا عزیز الرحمن ثانی، نائب امیر پیرمیاں رضوان نفیس، مولانا نصیراحمداحرار، مولانا اشرف گجر، مبلغ لاہور مولانا عبدالنعیم، مولانا خالد محمود، مولانا عبدالعزیز،مولانا عابد حنیف، ومولانا شبیر احمد،مفتی عبدالعزیز،مولانا راؤآصف، مولانا خبیب، مولانا عبدالرحمن، مولانا شکیل، مولانا عبدالغفور، مولانا محمد بلال،مولانا محمدقاسم، مولانا مشتاق، حافظ محمداحسان ودیگر علماء شریک تھے۔ مولانا عزیز الرحمن نے اپنے خطاب میں کہا کہ عقیدہ ختم نبوت اسلامی تعلیمات کی اساس، امت میں اتحاد کی فضا قائم کرنے کے لیے مینارہ نور ہے۔ کسی شخص کو انسانی حقوق اور مذہبی آزادی کی آڑ میں گستاخی رسول کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔

قادیانیوں کو غیرمسلم اقلیت قرار دیا جاناپاکستان کی نیشنل اسمبلی کا جرأت مندانہ فیصلہ ہے۔مولانا مفتی محمود،مولانا غلام غوث ہزاروی،مولانا شاہ احمدنورانی،پروفیسرغفوراحمد،چوہدری ظہور الٰہی،بھٹومرحوم اورانکی پوری کابینہ نے قادیانیوں کے دونوں گروہوں غیرمسلم اقلیت قرار دے کر امت مسلمہ کی ترجمانی کا حق اداکردیا ہے۔قادیانیوں کے بارے میں فیصلہ پوری قوم کا فیصلہ ہے۔مولانا نصیراحمداحرار نے کہا کہ قادیانیوں کو غیر مسلم اقلیت قراردینے کا فیصلہ صرف علماء کرام اور مفتیان عظام نہیں تھا بلکہ پاکستان کی دستور ساز اسمبلی سیشن کورٹس، ہائیکورٹس، سپریم کورٹ اور وفاقی شرعی عدالت سے لے کر کینیا، رابطہ عالم اسلامی، انڈونیشیا اور جنوبی افریقہ اور گمبیاکی عدالتوں نے بھی قادیانیوں کے کفر و ارتداد پر مہر تصدیق ثبت کر دی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -