کراچی کی مئیرشپ کسی اور کو دینے کی سازش ہورہی ہے،فاروق ستار 

  کراچی کی مئیرشپ کسی اور کو دینے کی سازش ہورہی ہے،فاروق ستار 

  

کراچی (این این آئی) تنظیم ایم کیو ایم بحالی کمیٹی کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے میئرکراچی وسیم اختر اور کنوینر ایم کیو ایم رابطہ کمیٹی ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی سے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کچرے اور صفائی کے معاملے پر کراچی کے والوں کے ساتھ مذاق کیا جارہا ہے۔ہم شہریوں کی تذلیل کو برداشت نہیں کریں گے۔ کوئی شام 6 بجے کے بعد ہواس کھو کر ایسی باتیں کرتا ہے تو کوئی صبح اٹھنے کے بعد ایسی باتیں کرتا ہے،کراچی والے کہاں جائیں۔مصطفی کمال نے بلاوجہ کا پنگا لیا ہے صرف سیاست ہورہی ہے۔تماشہ ہورہاہے ہونے دیں۔میں نے وسیم اختر سے15ارب روپے حساب مانگاتو مجھے اصول کی خلاف ورزی کا کہ کر پارٹی سے نکال دیاگیا۔بلدیاتی الیکشن میں کراچی کی مئیرشپ کسی اور کو دینے کی سازش ہورہی ہے۔بلدیاتی انتخابات کے بعد میئر کراچی اور خالد مقبول صدیقی سمیت سب ملک سے باہر ہونگے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ کئی روز سے عمومی طور پر کچرے اور صفائی کے معاملے کو لے کر جس طرح کراچی کے شہریوں کے ساتھ مذاق ہوا ہے وہ ان کی تذلیل کے مترادف ہے۔کراچی اور اسکے عوام کے ساتھ کھلواڑ ہورہا ہے،کراچی والے کہاں جائیں۔انہوں نے کہا کہ لوگوں نے اپنی ناکامی و نااہلی کو چھپانے کے لئے ایک دوسرے کے آگے تلواریں نکال لی ہیں۔کراچی والوں کو کم ازکم چار سو ارب روپے سالانہ ملنے چاہئیں۔میں نکلوں گااور کراچی والوں کو اکھٹا کرکے تحریک چلاؤں گا۔ایم کیو ایم کو بھی بچاؤں گا، کراچی کی مئیر شپ کراچی کے وارثوں کو دلانا اور شہر کو تعلیم یافتہ صاف ستھرا بنانا میرا عزم ہے۔ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ خالد مقبول صدیقی کو اپنی وزارت کے مزے اڑانے سے فرصت مل جائے تو وہ کراچی اور اسکے عوام کے لئے بھی کچھ سوچیں۔

فاروق ستار 

مزید :

صفحہ آخر -