کشمیری نوجوان داعش کی طرف  راغب ہوسکتے ہیں، خورشید قصوری

     کشمیری نوجوان داعش کی طرف  راغب ہوسکتے ہیں، خورشید قصوری

  

 اسلام آباد (این این آئی)سابق وزیرخارجہ خورشید محمود قصوری نے کہا ہے کہ اگر مزید تین ہفتے کشمیر کی صورتحال میں بہتری نہ آئی تو وہاں کے نوجوان داعش کی جانب راغب ہو سکتے ہیں، مسئلہ کشمیر جنگ سے حل نہیں ہوسکتا اس کیلئے کامیاب سفارت کاری ضروری ہے۔ایک انٹرویومیں انہوں نے کہاکہ مقبوضہ وادی سے کرفیو اٹھتے ہی وہاں کے حالات مزید بگڑ جائیں گے اور مودی حکومت جبر سے عوام کو نہیں دبا سکے گی۔کشمیر کی موجودہ صورتحال پر ردعمل دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر جنگ سے حل نہیں ہو سکتا لیکن نریندری مودی نے اس وقت بہت سخت اقدامات اٹھائے ہیں۔انہوں نے کہاکہ بھارتی وزیراعظم نے اپنے معاشی صورتحال چھپانے کے لیے کشمیر کا مسئلہ کھڑا اور اب سے دنیا میں رسوائی اٹھانی پڑ رہی ہے۔سابق وزیرخارجہ نے بتایا کہ مشرف کے دور حکومت میں مسئلہ کشمیر حل ہونے کے قریب تھا تاہم بد قسمتی سے پاکستان میں وکلا کا احتجاج شروع ہوگیا اور بھارت کیساتھ معاملات آگے نہیں بڑھ سکے۔خورشید محمود قصوری مشورہ دیا کہ پاک امریکہ تعلقات کی موجودہ صورتحال سے صحیح فائدہ اٹھانے کے لیے کامیاب سفارت کاری ضروی ہے۔

خورشید قصوری

مزید :

صفحہ آخر -