پنجا ب میں غریبوں کے ریلیف دینے کیلئے ٹارگٹڈ سبسڈی کی تجویز پر کمیٹی تشکیل

  پنجا ب میں غریبوں کے ریلیف دینے کیلئے ٹارگٹڈ سبسڈی کی تجویز پر کمیٹی تشکیل

  

لاہور(آئی این پی)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے پنجاب کے سرکاری کالجوں میں 4500 کالج ٹیچر انٹرنز(سی ٹی آئیز)کی خالی آسامیوں پر بھرتی کی منظوری دے دی ہے جبکہ400 خالی آسامیوں پر اقلیتی اورخصوصی افرادکے کوٹے سے بھرتیاں ہوں گی۔وزیراعلیٰ نے اس ضمن میں محکمہ ہائر ایجوکیشن کی سمری منظور کرلی ہے۔موجودہ تعلیمی سال کے دوران تسلی بخش کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے سی ٹی آئیزکو دوبارہ موقع دیا جائے گا، تاہم سی ٹی آئیز کو دوبارہ موقع دینے کا مطلب مدت ملازمت میں توسیع نہیں ہوگا۔وزیراعلیٰ نے متعلقہ انتظامی محکمے کو سی ٹی آئیز کی کارکردگی جانچنے کا میکانزم وضع کرنے کی ہدایت کی ہے۔وزیراعلیٰ نے تعلیمی سال 2020-21 کیلئے سی ٹی آئیز کی بھرتی کیلئے جامع پالیسی کے حوالے سے سفارشات بھی طلب کرلی ہیں۔وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ بھرتیوں سے کالجوں میں اساتذہ کی کمی دورہوگی اور بھرتی کا عمل ہر لحاظ سے شفاف اورمیرٹ پر مبنی ہوگا۔سرکاری کالجوں میں تعلیمی معیار کو بہتر بنائیں گے اور سی ٹی آئیز بھرتی ہونے سے طلبہ کا قیمتی وقت ضائع نہیں ہوگا۔ اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں استحکام اور پرائس کنٹرول کیلئے کیے جانے والے اقدامات سے متعلق جائزہ اجلاس میں غریب افراد کو ریلیف دینے کیلئے ٹارگٹڈ سبسڈی دینے کی تجویزپیش کی گئی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ٹارگٹڈ سبسڈی کیلئے قابل عمل سفارشات 7 روز میں پیش کرنے کی ہدایت کی اوراس ضمن میں صوبائی وزیر صنعت میاں اسلم اقبال کی سربراہی میں کمیٹی تشکیل دی گئی جوغریب افراد کو ریلیف دینے کیلئے ٹارگٹڈ سبسڈی کے پلان کو حتمی شکل دے گی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کسان مارکیٹس کے قیام کا بھی جائزہ لے کر حتمی پلان پیش کیا جائے۔ کسان مارکیٹس میں کاشتکار سبزیاں براہ راست فروخت کرسکیں گے۔وزیراعلیٰ نے پرائس کنٹرول میکانزم کی موثر مانیٹرنگ کا حکم دیتے ہوئے کہاکہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس روزانہ کی بنیاد پر اشیائے ضروریہ کے نرخ چیک کریں اورانفورسمنٹ میکانزم پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔انہوں نے کہا کہ چینی ذخیرہ کرنیوالوں کیخلاف بلاامتیاز کریک ڈاؤن جاری رکھا جائے۔ مصنوعی مہنگائی کرنیوالوں سے کوئی رعایت نہیں ہوگی۔مقرر کردہ نرخوں سے زائد پر اشیائے ضروریہ فروخت کرنیوالوں کیخلاف سخت ایکشن لیا جائے۔ عوام کو ریلیف کی فراہمی کیلئے آخری حد تک جائیں گے کیونکہ صوبے کے عوام کو ناجائز منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑا جاسکتا۔ایک دوسرے اجلاس میں بہبود آبادی سے متعلق امور پر غورکیاگیا۔وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آبادی پرکنٹرول کے بغیرصحت وتعلیم کی بہتر سہولتوں کے اہداف ممکن نہیں لہٰذابہبود آبادی سے متعلق عوامی شعور کی بیداری کیلئے معاشرے کے ہر طبقے کو اپنا کردارادا کرنا ہوگا۔ وزیراعلیٰ نے محکمہ صحت کے ڈاکٹرز اوردیگر عملے کو بھی پاپولیشن ویلفیئر کے امور میں شامل کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ پولیو ورکرز بھی فیلڈ ڈیوٹی کے دوران پاپولیشن ویلفیئر کے امور پرآگاہی فراہم کریں۔انہوں نے کہا کہ بہبود آبادی کے اہداف حاصل کرنے کیلئے ایس او پیز پر عملدر آمد یقینی بنایا جائے اورعلماء،خطباء اورمعاشرے کے دیگر قابل قدر طبقات کوبہبود آبادی کی مہم میں شامل کیا جائے۔علاوہ ازیں ایک بیان میں وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے انسداد پولیو کے لیے فعال ومتحرک انداز میں بھرپور مہم چلانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ انسداد پولیو کے لیے اقدامات میں غفلت برداشت نہیں کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ انسداد پولیو مہم کے لیے وضع کردہ پلان پر100فیصد عملدرآمد یقینی بنایا جائے اور فیلڈ میں موجود انسداد پولیو ٹیموں کی موثر مانیٹرنگ کی جائے۔

بھرتی منظور/عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -