میئر کراچی کو اخلاقی طور پر فی الفور مستعفی ہوجانا چاہیے، مرتضی وہاب 

    میئر کراچی کو اخلاقی طور پر فی الفور مستعفی ہوجانا چاہیے، مرتضی وہاب 

  

 کراچی(اسٹاف رپورٹر)ترجمان سندھ حکومت اور وزیراعلی سندھ کے مشیر قانون ماحولیات بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ مئیر کراچی وسیم اختر نے شروع دن سے اب تک اختیارات کا رونا لگایا ہوا ہے۔اب عوام ان کے جھانسے میں نہیں آئیں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ اسمبلی بلڈنگ میں میڈیا کارنر پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ کراچی میں صفائی نہ ہونے کا معاملہ اختیارات کا نہیں بلکہ نیتوں کا ہے ایم کیو ایم کی قیادت کی نیت شروع دن سے کام نہ کرنے اور دوسروں کو دشنام طرازی کی رہی ہے۔انہیں ڈر ہے کہ کراچی کے مسائل حل ہو گئے تو ان کی سیاست ختم ہو جائیگی۔ مشیر قانون نے کہا کہ سندھ حکومت نے انہیں پچھلے تین سالوں میں 41 ارب روپے فراہم کئے جبکہ نالوں کی صفائی کے لیے 55 کروڑ روپے دیئے جس کا اعتراف وسیم اختر کر چکے ہیں۔مگر انہوں نے نالوں کی صفائی کے لیے کوئی تیاری نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ مصطفی کمال میئر کراچی کا چیلنج کو قبول کیا مگر وسیم اختر نے ڈرامائی انداز میں راہ فرار اختیار کی کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ پیسوں کے حساب میں وہ بچ نہیں سکیں گے۔صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے ترجمان سندھ حکومت نے کہا کہ مئیرکراچی نے حیرت انگیز نوٹیفیکیشن جاری کیا جس میں قانونی پیچیدگیاں تو ہوسکتی ہیں مگر ہم کراچی شہر کے وسیع تر مفاد میں خاموش رہے۔مصطفی کمال نے کام کرنے کی کوشش کی مگر انہیں نہیں کرنے دیا گیا۔آخر کب تک اہل کراچی ایم کیوایم کے ڈرامہ بازیوں کو برداشت کریں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ وفاقی حکومت کی یوٹرن پالیسی پر اب ان کے اتحادی " نفیس" لوگ بھی عمل پیرا ہیں۔انہوں نے کراچی کے ووٹوں کی سودے بازی کر کے تحریک انصاف کو حکومت میں لانے کا اتحاد کیا ہے جوکہ عوام کے مینڈیٹ کی سراسر تو ہین ہے۔

مزید :

صفحہ اول -