سیاسی جماعتیں جلسوں میں کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے کشمیرکا پرچم لہرائیں: شوبز شخصیات

سیاسی جماعتیں جلسوں میں کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے کشمیرکا پرچم ...

  

لاہور(فلم رپورٹر)شوبز کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات کا کہنا ہے کہ آ زاد کشمیر کے دار الحکومت میں پاکستان کی مختلف جماعتوں کی طرف سے یکجہتی کے لئے آنے والے زعماء کرام آزادی کے بیس کیمپ میں اپنی جماعتوں کے پرچم لہرانے کے بجائے صرف کشمیر کے پرم پر ہی اکتفا کریں تاکہ اہل کشمیرکے لئے اتحاد اور یکجہتی کا پیغام دیا جاسکے۔ کشمیر میں 23ویں روز بھی کرفیو اور دیگر سخت پابندیاں جاری ہیں اورکشمیریوں کووادی کشمیرمیں بدترین معاشی نقصانات سمیت شدیدترین مشکلات کاسامناہے۔ہر آنے والے دن میں بھارت کے مظالم میں اضافہ ہورہا ہے۔ ایسی صورتحال میں مسلمانوں حکمرانوں کامودی کے ساتھ پیار انتہائی حیران کن ہے۔تاریخ موودی جیسے درندے کو کبھی معاف نہیں کرے گی۔اس کو اپنے ظلم کا حساب دینا ہوگا۔پوری دنیا کے مسلمانوں کو کشمیر کے مظلوم مسلمانوں کے لئے آواز اٹھانا ہوگی۔یاد رہے کہ کشمیر میں مسلسل23ویں روز بھی بازار اور سکول بند رہنے کے باعث معمولات زندگی بری طرح متاثر ہیں اور لوگوں کو خوراک اورجان بچانے والی ادویات سمیت اشیائے ضروریہ کی شدید قلت کا سامناہے اور وادی کشمیر شدید انسانی بحران کا منظر پیش کررہی ہے۔لاکھوں لوگ اپنے گھروں میں محصورہوکر رہ گئے ہیں اور جموں وکشمیر ایک جیل کا منظر پیش کر رہا ہے۔قابض انتظامیہ نے 5اگست کو بھارتی حکومت کی طرف سے جموں وکشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعدوادی کشمیر اورجموں خطے کے ڈوڈہ،کشتواڑ، پونچھ، رام بن اور راجوری اضلاع میں ٹیلیفون، موبائل اور انٹرنیٹ سروسزسمیت تمام مواصلاتی رابطے منقطع اور ٹی وی چینلوں کی نشریات بندکردی تھیں جو مسلسل جاری ۔شاہد حمید،معمر رانا،مسعود بٹ،حسن عسکری،شانسید نور،میلوڈی کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی،صائمہ نور،میگھا،ماہ نور،انیس حیدر،ہانی بلوچ،یار محمد شمسی صابری،سہراب افگن،ظفر اقبال نیویارکر،عذرا آفتاب،حنا ملک،انعام خان،فانی جان،عینی طاہرہ،عائشہ جاوید،میاں راشد فرزند،سدرہ نور،نادیہ علی،شین،سائرہ نسیم،صبا ء کاظمی،،سٹار میکر جرار رضوی،آغا حیدر،دردانہ رحمان،ظفر عباس کھچی،سٹار میکر جرار رضوی،ملک طارق،مجید ارائیں،طالب حسین،قیصر ثنا ء اللہ خان،مایا سونو خان،عباس باجوہ،مختار چن،آشا چوہدری،اسد مکھڑا،وقا ص قیدو، ارشدچوہدری،چنگیز اعوان،حسن مراد،حاجی عبد الرزاق،حسن ملک،عتیق الرحمن،اشعر اصغر،آغا عباس،صائمہ نور،خرم شیراز ریاض،خالد معین بٹ،مجاہد عباس،ڈائریکٹر ڈاکٹر اجمل ملک،کوریوگرافر راجو سمراٹ،صومیہ خان،حمیرا چنا،اچھی خان،شبنم چوہدری،محمد سلیم بزمی،سفیان،انوسنٹ اشفاق،استاد رفیق حسین،فیاض علی خاں،پروڈیوسر شوکت چنگیزی،ظفر عباس کھچی،ڈی او پی راشد عباس،پرویز کلیم،نیلم منیر خان اور نجیبہ بی جی نے کہا کہ موجودہ ماحول میں ایک عام انسان کا جینا کتنا مشکل ہے اس کا اندازہ لگانا ہر کسی کے بس کی بات نہیں ہے۔اب کشمیر کی آزادی دور نہیں جلد وہاں آزادی کا سورج طلوع ہوگا اور وہاں کے لوگ بھارت کی غلامی سے تا قیامت آزاد ہوجائیں گے۔

مزید :

کلچر -