محکمہ معدنیات کی بہترکارکردگی ، خزانہ میں کروڑوں روپے کا اضافہ 

محکمہ معدنیات کی بہترکارکردگی ، خزانہ میں کروڑوں روپے کا اضافہ 

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)محکمہ معدنیات ملاکنڈ ڈویڑن کی جانب سے معدنیات کی غیر قانونی کان کنی کو روکنے اور معدنیات کی کان کنی کو قانون میں لانے کے باعث صوبائی خزانے کو 30کروڑ 80 لاکھ روپے کا فائدہ پہنچایا گیا ہے۔ محکمہ کے اعلامیہ کے مطابق ملاکنڈ ڈویڑن کے ڈپٹی ڈائریکٹر ٹیکنیکل کی جانب سے سوات میں ہونے والی غیر قانونی کان کنی کی روک تھام کے ساتھ ساتھ مذکورہ علاقے میں معدنیات کی کان کنی کو قانون کے مطابق بنانے کے لئے کئے جانے والی اقدامات کی وجہ سے کروڑوں روپے کا صوبائی خزانے کا فائدہ پہنچا ہے اور انہی کوششوں کے باعث شانگلہ اور دیر اپر میں معدنیات کی نیلامی پہلی بار کی گئی ہے۔محکمہ معدنیات ملاکنڈ ڈویڑن کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات اور معدنیات کی اکشن کے باعث سوات میں 166 .4 ملین۔ شانگلہ 111.1ملین۔ ملاکنڈ 15.6۔چترال 12اور دیر اپر میں 2.738 ملین معدنیات کی نیلامی کی گئی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -