الیکشن کمیشن کے نئے ممبر زکی تعیناتی کیخلاف کیس،عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کردیا،سماعت12 ستمبر تک ملتوی

الیکشن کمیشن کے نئے ممبر زکی تعیناتی کیخلاف کیس،عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری ...
الیکشن کمیشن کے نئے ممبر زکی تعیناتی کیخلاف کیس،عدالت نے فریقین کو نوٹس جاری کردیا،سماعت12 ستمبر تک ملتوی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے الیکشن کمیشن کے نئے ممبرز کی تعیناتی کیخلاف کیس میں سیکرٹری صدر ،پرنسپل سیکرٹری اور وزارت پارلیمانی امور،دونوں نئے ممبرز اورالیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کر دیئے،عدالت نے ممبرز کو حلف لینے سے فوری روکنے کی درخواست پر بھی نوٹسزجاری کردیا، ہائیکورٹ نے درخواست پر حکم امتناع نہیں دیااورسماعت 12 ستمبر تک ملتوی کردی۔تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں الیکشن کمیشن کے نئے ممبرز کی تعیناتی کیخلاف کیس کی سماعت ہوئی،دوران سماعت چیف جسٹس اطہر من اللہ نے سوال کیا کہ غیرقانونی کیا ہوا ہے؟اپوزیشن لیڈر نے چیلنج نہیں کیا ہو سکتا وہ متفق ہوں،چیف جسٹس نے کہا کہ یہ پارلیمنٹ ،اپوزیشن کا معاملہ ہے عدالت اس میں نہیں پڑسکتی ،پارلیمنٹ کے معاملات عدالتوں میں کیوں حل کرانا چاہتے ہیں،عدالت نے کہا کہ اتنے بڑے پیمانے پر غیر قانونی اقدام ہوا تو پارلیمنٹ میں کیوں نہیں اٹھایا ،عدالت چاہتی ہے پارلیمنٹ مضبوط ہو،چیف جسٹس نے کہا کہ کیا اپوزیشن نے پارلیمنٹ میں قراردادپیش کی ،اپوزیشن کے پاس عدالت آنے سے پہلے کیاکوئی اور فورم ہے ،رکن قومی اسمبلی محسن شاہ نوازرانجھا روسٹرم پر آگئے ،محسن شاہ نواز نے کہا کہ ممبر کی تعیناتی سے قبل مشاورت ہی نہیں ہوئی تو فورم کون ساہوگا،عدالت نے کہا کہ آپ کہہ رہے ہیں آئین کیخلاف کوئی کام ہوتو پارلیمنٹ کچھ نہیں کر سکتی ،عدالت کو تو پارلیمنٹ کے معاملات میں نہیں پڑناچاہئے ،چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ ٓاپوزیشن نے آئین کی اس خلاف ورزی کو کہاںچیلنج کیا؟محسن شاہ نواز رانجھا نے کہا کہ قومی اسمبلی اجلاس میں اپوزیشن لیڈر معاملے کو اٹھائیں گے ۔عدالت نے الیکشن کمیشن کے نئے ممبرز کی تعیناتی کیخلاف کیس میں سیکرٹری صدر ،پرنسپل سیکرٹری اور وزارت پارلیمانی امور،دونوں نئے ممبرز اورالیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کر دیئے،عدالت نے ممبرز کو حلف لینے سے فوری روکنے کی درخواست پر بھی نوٹسزجاری کردیا،ہائیکورٹ نے درخواست پر حکم امتناع نہیں دیااورسماعت 12 ستمبر تک ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -