قومی شناختی کارڈ کی شرط موجود ہے،بے نامی اثاثوں پر کارروائیاں مزید تیز کی جائیں گی،چیئرمین ایف بی آر

قومی شناختی کارڈ کی شرط موجود ہے،بے نامی اثاثوں پر کارروائیاں مزید تیز کی ...
قومی شناختی کارڈ کی شرط موجود ہے،بے نامی اثاثوں پر کارروائیاں مزید تیز کی جائیں گی،چیئرمین ایف بی آر

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیئرمین ایف بی آرشبر زیدی نے کہاہے کہ بے نامی اثاثے ڈھونڈنا آسان نہیں ہے،وہی بے نامی اثاثے سامنے آئے جو عدالت کے ذریعے سامنے آئے ،بے نامی اثاثوں پر کارروائیاں مزید تیز کی جائیں گی،بے نامی اثاثوں کی تلاش کیلئے وزیراعظم نے بھی سخت احکامات دیئے ہیں ،انہوں نے کہا کہ قومی شناختی کارڈ کی شرط موجود ہے لیکن کارروائی ستمبر تک روک دی ہے،قومی شناختی کارڈ کی شرط موجود رہے گی،میڈیا رپورٹس کے مطابق چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے کہا ہے کہ انکم ٹیکس فائلر کی تعداد 25لاکھ سے بڑھ گئی ہے،انکم ٹیکس گوشوارے داخل کرنے کا مرحلہ مزید آسان کررہے ہیں،سیلز ٹیکس گوشوارے کی مانٹیرنگ کیلئے سافٹ ویئر لانچ کردیاہے،سیلز ٹیکس سافٹ ویر ٹیکس دہندگان پر عائد سیلز ٹیکس اورفیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا تعین کریگا،شبر زیدی نے کہا کہ سیلز ٹیکس گوشوارہ فارم آسان بناکر ایک صفحے کاکردیا ہے ،کوشش کررہے ہیں مرکزی سسٹم آجائے کہ کتنا پیسا منتقل ہورہا ہے ،انہوں نے کہا کہ ہم نے دکانداروں کوسمجھایا ہے دوعلیحدہ سکیم دی ہیں ،قومی شناختی کارڈ کی شرط موجود ہے لیکن کارروائی ستمبر تک روک دی ہے،قومی شناختی کارڈ کی شرط موجود رہے گی،چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ ٹیکس نیٹ بڑھانے کیلئے ڈاکٹر انجینئراور تعلیمی اداروں کو نوٹس بھیجے ہیں ،جو بھی سیکٹر آمدنی کرتا ہے اسے ٹیکس دینا ہوگا،شبر زیدی نے کہا کہ بے نامی اثاثے ڈھونڈنا آسان نہیں ہے،وہی بے نامی اثاثے سامنے آئے جو عدالت کے ذریعے سامنے آئے ،بے نامی اثاثوں پر کارروائیاں مزید تیز کی جائیں گی،بے نامی اثاثوں کی تلاش کیلئے وزیراعظم نے بھی سخت احکامات دیئے ہیں ۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -