معاشرے کےکمزور اور پسماندہ طبقے کو سماجی تحفظ فراہمکرنا ریاست کی بنیادی ذمہ داری ہے: صدرڈاکٹر عارف علوی

معاشرے کےکمزور اور پسماندہ طبقے کو سماجی تحفظ فراہمکرنا ریاست کی بنیادی ذمہ ...
معاشرے کےکمزور اور پسماندہ طبقے کو سماجی تحفظ فراہمکرنا ریاست کی بنیادی ذمہ داری ہے: صدرڈاکٹر عارف علوی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے ”احساس“پروگرام اور بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی جانب سے منصفانہ اور غیرسیاسی حکمت عملی کی پیروی کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ معاشرے کے اقتصادیطور پر کمزور اور پسماندہ طبقے کو سماجی تحفظ فراہم کرنا ریاست کی بنیادیذمہ داری ہے۔

انہوں نے یہ بات بی آئی ایس پی ہیڈ کوارٹرز کے دورےکے دوران احساس پروگرام اور بی آئی ایس پی کے بارے میں بریفنگ کی صدارتکرتے ہوئے کہی۔ وزیراعظم کی معاون خصوصی و چیئرپرسن بی آئی ایس پی ڈاکٹرثانیہ نشتر اور سینئر حکام اس موقع پر موجود تھے۔ صدر مملکت نے انپروگراموں کی رسائی کو بڑھانے کے لئے عوام کی سماجی بہبود کے شعبہ میں

کام کرنے والی نجی تنظیموں کے ساتھ موثر رابطہ کار کی ضرورت پر زور دیا۔جدید ترین ڈیٹا بیس تیار کرنے کے لئے ”قومی سماجی و اقتصادی رجسٹری“ کےکام کو سراہتے ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ ڈیٹا جمع کرنا اور اس کیڈیجیٹلائزیشن ان پروگراموں کی کامیابی اور موثر عملدرآمد کے لئے بہتزیادہ اہمیت کا حامل ہے۔ انہوں نے ادائیگیوں کے عمل میں شفافیت کو یقینیبنانے کے لئے سمارٹ فون ایپلیکیشن اور موبائل والٹ جیسی جدید ترینٹیکنالوجی کو بروئے کار لانے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ وسیلہتعلیم پروگرام کو سکولوں میں بچیوں کے اندراج کو بہتر بنانے کے لئے مزیدتقویت دی جائے۔ بی آئی ایس پی کے نیوٹریشن کے پروگرام کے بارے میں گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مختلف ذرائع سے عوامی آگاہی مہمات بھی شروع کیجانی چاہیے تاکہ غذائیت اور نشو و نما میں کمی کے مسائل کو حل کیا جاسکے۔ صدر نے بی آئی ایس پی کے گریجوایشن پروگرام کی تعریف کرتے ہوئے امید

ظاہر کی کہ اس پروگرام سے مستفید ہونے والے افراد کو ہنر سیکھ کر اپنےپاؤں پر کھڑا ہونے میں مدد ملے گی اور اس طرح وہ غربت کے چنگل سے نکلسکیں گے۔

مزید :

قومی -