ٹیکسی میں سوار لڑکی کے قتل کیس میں اہم پیش رفت ہو گئی

ٹیکسی میں سوار لڑکی کے قتل کیس میں اہم پیش رفت ہو گئی
ٹیکسی میں سوار لڑکی کے قتل کیس میں اہم پیش رفت ہو گئی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) ٹیکسی میں ہوئے لڑکی کے قتل کے کیس میں اہم پیش رفت ہوئی ہے، پولیس نے مقتولہ آمنہ کے ساتھ موبائل پر کانفرنس کال کرنے والے 3 افراد کو حراست میں لے لیا۔سی آئی اے پولیس نے نوجوان شیخ ارسلان اور عثمان سمیت 3 نوجوانوں کو حراست میں لیا ہے۔پولیس کے مطابق مقتولہ آمنہ کی شیخ ارسلان سے دوستی تھی، شیخ ارسلان نے پولیس کو بیان دیا کہ لڑکی کئی مرتبہ دبئی گئی، اس لئے دبئی میں موجود فیضان اس سے سخت ناراض تھا۔فیضان کا کہنا ہے کہ آمنہ کی مجھ سے کچھ عرصہ قبل دوستی رہی ہے لیکن قتل سے میرا تعلق نہیں، آمنہ سے دوستی 6 ماہ پہلے ہی ختم کر دی تھی، آمنہ دبئی میں آ کر پتنگ بازی بھی کرتی تھی۔واضح رہے کہ آمنہ کو 10 اگست کو لاہور کے سگیاں پل کے قریب ٹیکسی میں قتل کر دیا گیا تھا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -