نوشہرہ نجی سود اور انڈر پلے کا کاروبار عروج پر، شریف گھرانوں کی زندگی اجیرن

  نوشہرہ نجی سود اور انڈر پلے کا کاروبار عروج پر، شریف گھرانوں کی زندگی اجیرن

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ) نوشہرہ نجی سود اور انڈر پلے کا کاروبار عروج پر،پولیس اور مافیاکی ملی بھگت سے شریف گھرانوں کی زندگی اجیرن،پگڑیاں اچھالنا معمول،نجی سودخور مافیا اور متاثرین کے فیصلے تھانوں کی سرپرستی میں ہونے لگے،پولیس کاروائی سے گریزاں،مافیاکے ھاتھوں کروڑوں سے محروم ہونے والے بوڑھے باپ نے سیٹیزن پورشل سمیت مختلف اداروں اور اعلیٰ حکام کو تین سو سے زائد درخواستیں دیں تاھم داد رسی کی بجائے اسی کے خلاف پرچہ کٹ گیا،بوڑھے باپ نے اپنے نافرمان بیٹے کی انڈر پلے کاروبار کی وجہ سے کروڑوں کا نقصان اٹھانے کے بعد بیٹا پکڑ کر پولیس کے حوالے کرکیاسکے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کی درخواست کی تو پولیس نے پانچ ھزار برائے اندراج ایف آئی آر لئے اور بیٹا چھوڑ دیا،نافرمان بیٹا ایک بار پھر والد کو لوٹنے گھر پہنچا تو والد نے سوشل میڈیا پر اپنی فریاد جاری کردی، اس دھندے کے دوام کا انکشاف تب ہوا جب جہانگیر خان سکنہ نوشہرہ کلاں نے سوشل میڈیا کے سماجی رابطوں کے ایک ویب سائیٹ پر اپنی ویڈیو کہانی ریلیز کردی،اپنے ویڈیومیں جہانگیر خان نے کہا کہ اسکا بیٹا عدنان جوکہ انڈر پلے مافیا کے ھاتھو کھلونا بنا ہوا ہے اور مافیا ہمیں کروڑوں سے محروم کرچکا ہے اسکے خلاف میں نے آئی جی، سیٹیزن پورٹل سمیت مختلف اداروں کو کاروائی کیلئے درخواستیں دیں تاھم اسکے خلاف کاروائی کی بجائے الٹا میرے خلاف کیس درج کیا گیا،ان کا کہنا تھا کہ میں نے اپنے بیٹے اور مافیا کے خلاف ھر دروازہ کھٹکھٹایالیکن کہیں سے شنوائی نہیں ہوئی اور مافیا ھر کسی کو خرید لیتاہے،مجھے ڈرانا دھمکانا شروع کردیا جاتاہے،انہوں نے کہ اب گذشتہ روز میں نے اپنے بیٹے عدنان کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کیا اور اسکے خلاف ایف آئی آر کی درخواست کی  تو پولیس کی ایک موبائل آئی اور مجھ سے کاروائی کیلئے پانچ ھزار روپے لئے لیکن پھر بھی ایف آئی آر درج نہ ہوئی اور میرے نافرمان بیٹے کو چھوڑدیا جو دوبارہ مجھے ڈرادھمکا کر لوٹنے کی کوشش کررہاہے،انہوں نے اپنے ویڈیو بیان میں اعلیٰ حکام سے ایک بار پھر اپیل کی کہ وہ اسکے نافرمان بیٹے اور سودخور مافیا کے خلاف کاروائی کرے اور مجھ سے سود کی آڑھ میں لوٹے گئے پیسے واپس کرائیں،دریں اثناء نوشہرہ ضلع بھر میں اڈرپلے اور نجی سود نے خوشحال اور شریف گھرانوں کی زندگی اجیرن بنا رکھی ہے،مافیا شریف گھرانوں کے نواجوانوں کو بہلاپھسلاکر ایک بار سود کی جھال میں پھنسا دیتے ہیں اور دیکھتے ہی دیکھتے انہیں سود کی زنجیروں میں جھکڑ دیتے ہیں اور پھر شریف گھرانے اپنے گھر بار تک سے محروم ہوجاتے ہیں،یہ دھندہ ضلع بھر میں دیدہ دلیری سے جاری ہے اور ذرائع کے مطابق ایسے واقعات کے فیصلے تھانوں کی سرپرستی میں ہوتے ہیں۔ادھر بوڑھے باپ کی فریاد کی ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد ڈی پی اور نوشہرہ نے ایف آئی آر کے اندراج کیلئے پیسے لینے والے پولیس اہلکاروں کو معطل کرکے کوارٹر گاٹ میں ڈال دیا اور  انچارج چوکی حنیف خان کو لائن حاضر کر دیا گیاواقعے کی تحقیقات شروع کردیں،

مزید :

پشاورصفحہ آخر -