قومی احتساب بیورو رولز کا مجوزہ مسودہ سپریم کورٹ میں جمع 

  قومی احتساب بیورو رولز کا مجوزہ مسودہ سپریم کورٹ میں جمع 

  

 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)چیئرمین قومی احتساب بیورو (نیب) جسٹس (ر) جاوید اقبال نے نیب رولز کا مجوزہ مسودہ سپریم کورٹ میں جمع کروادیاجس میں کہا گیا ہے کہ چیئرمین نیب کو انکوائری کی مدت میں مزید 3 ماہ توسیع کا اختیار ہے۔ نجی ٹی وی کے مطابق سپریم کورٹ کے حکم پر نیب آرڈیننس کی روشنی میں نیب رولز کا مجوزہ مسودہ تیار کیا گیا ہے۔ مجوزہ مسودے کے مطابق چیئرمین نیب انکوائری کے دوران کسی مرحلے پر ملزم کی گرفتاری حکم دے سکتے ہیں۔اس میں بتایا گیا کہ نیب قانونی تقاضے پورے کر کے وزارتِ داخلہ کو ملزم کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کر سکتا ہے۔نیبچ میں بتایا گیا کہ کرپشن سے کمائے گئے پیسے کا 25 فیصد فیڈرل کنسولیڈیٹڈفنڈ میں جمع کروایا جاتا ہے۔اس میں بتایا گیا کہ نیب میں تقرریاں سلیکشن بورڈ کے ذریعے کی جاتی ہیں، سیلیکشن بورڈ گریڈ 21 کے تین نیب افسران پر مشتمل ہوتا ہے۔مجوزہ مسودے میں کہا گیا کہ مجاز اتھارٹی کی منظوری کے بعد افسران کا تبادلہ ایک سے دوسرے کیڈر میں ہوسکتا ہے۔

نیب مسودہ

مزید :

صفحہ اول -