ڈاکٹر عامر لیاقت رنگے ہاتھوں پکڑے گئے

ڈاکٹر عامر لیاقت رنگے ہاتھوں پکڑے گئے
ڈاکٹر عامر لیاقت رنگے ہاتھوں پکڑے گئے

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) کراچی میں طوفانی بارشوں کی وجہ سے ہر طرف پانی پانی ہوگیا، کئی افراد زندگی کی بازی ہار گئے ، وزیراعظم عمران خان نے بھی کراچی کی صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے اراکین اسمبلی کو گھروں سے نکل کر لوگوں کی معاونت کی ہدایت کردی لیکن ایسے میں ان کی جماعت کے ایک رکن اسمبلی ڈاکٹر عامر لیاقت حسین ایک غیرملکی پرانی ویڈیو کو کراچی کی قرار دیتے ہوئے شیئر کرتے رنگے ہاتھوں پکڑے گئے تاہم یہ ویڈیو وائرل ہوچکی ہے ۔

ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے ایک ویڈیو شیئرکی اور کیپشن میں لکھا کہ " خدا حافظ کراچی"

ان کی ویڈیو میں ایک ٹریفک سگنل کو پانی میں تیرتا دیکھا جاسکتا ہے جبکہ دلچسپ بات یہ ہے کہ پاکستان میں زیادہ تر ٹریفک سگنل بجلی پر ہی ہیں لیکن اپنی جگہ چھوڑ کر تیراکی میں مصروف اس ٹریفک سگنل کی لائٹس جل رہی ہیں یعنی یہ سگنل پاکستان نہیں کیونکہ پول سے الگ ہوتے ہی تاروں کا کنکشن ٹوٹ جانا تھا اور پھر لائٹس کا جلتے رہنا ممکن نہ تھا ۔ ممکنہ طورپر یہ سگنل چین میں تھا جس کے اندر بیٹریز موجود ہوں گی ۔ اس ویڈیو کو غور سے دیکھیں تو پارکنگ میں سکوٹیز بھی کھڑی ہیں جبکہ پاکستان میں سکوٹیز کا رواج نہیں ۔عامر لیاقت حسین نے بھی یہ ویڈیو سید فیاض علی سے لی تھی جس کو انہوں نے کریڈٹ بھی دیا ہے ۔

عامر لیاقت حسین کی اس ویڈیو پر ایک صارف نے لکھا کہ " کراچی نہیں ہے بزرگو، چین یا انڈیا ہوسکتا ہے ، سکوٹیز کھڑی ہیں،زیادہ امکان ہے کہ چین ہوگا، بہر کیف شہر قائد نہیں "

عامر لیاقت کی طرح کئی لوگ پہلے بھی اس ویڈیو کو شیئرکرچکے ہیں اور ایک صاحب نے اسے 5 ستمبر 2019 کو ممبئی کی ویڈیو قراردے کر شیئرکیا تھا لیکن دلچسپ انداز میں ممبئی پولیس سے سوال کیا تھا کہ اگر ایک ٹریفک سگنل سڑک پار کرجائے تو کتنا جرمانہ ہے ؟

چائنہ پلس سائوتھ افریقہ نے یہی ویڈیو 13 جون 2018 کو شیئرکی اور  پولیس آفیسر کو مخاطب کر تے ہوئے لکھا کہ اگر میرے پاس سے ایک ٹریفک سگنل گزرے تو مجھے کیا کرنا ہے ؟ اسی پیج نے لکھا کہ یہ ویڈیو کلپ چین کے علاقے گوانگژی کی لچئوان کائونٹی میں مئی میں آنیوالے فلڈ کے دوران بنایا گیا ۔ 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -