پلوامہ حملہ، ڈیڑھ سال بعد بھارتی حکومت نے پھر ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی کہیں گے یہ دوبارہ چائے پی کر ہی مانیں گے

پلوامہ حملہ، ڈیڑھ سال بعد بھارتی حکومت نے پھر ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی کہیں ...
پلوامہ حملہ، ڈیڑھ سال بعد بھارتی حکومت نے پھر ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی کہیں گے یہ دوبارہ چائے پی کر ہی مانیں گے

  

نئی دلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی حکومت کی جانب سے الزام لگایا گیا ہے کہ پلوامہ حملہ کے ذمے دار پاکستان میں ہیں۔

بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان نے ایک نیوز کانفرنس کے دوران بتایا کہ پلوامہ حملے کی چارج شیٹ ڈیڑھ سال بعد داخل کردی گئی ہے۔ یہ چارج شیٹ دہشت گردی اور سنگین جرائم کرنے والے مجرموں کو قانون کے دائرے میں لانے کیلئے داخل کی گئی ہے ۔ ہمارا مقصد صرف بیان یا نوٹیفکیشن جاری کرنا نہیں ہے ۔ بلکہ مجرموں کو قانون اور انصاف کے دائرے میں لانا ہے۔

بھارتی دفتر خارجہ نے الزام عائد کیا کہ پلوامہ حملہ کے ذمہ دار پاکستان میں ہیں لیکن پاکستان ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کر رہا ۔

خیال رہے کہ پلوامہ حملے کے بعد وزیر اعظم عمران خان نے بار بار بھارتی حکومت سے کہا تھا کہ اگر پاکستان کا کوئی شخص اس کارروائی میں ملوث ہے تو ثبوت فراہم کیے جائیں لیکن مودی سرکار نے ثبوتوں کی بجائے اپنے طیارے بھیج دیے تھے۔ 26 فروری کو پاک فضائیہ کی فوری کارروائی کے بعد بھارتی طیارے دم دبا کر بھاگے جس کے بعد 27 فروری کو پاکستان نے بھارتی حدود میں ٹارگٹس کو نشانہ بنایا ۔ پاکستانی طیاروں کا پیچھا کرتے ہوئے بھارتی طیارے پاکستان میں داخل ہوئے تو پاک فضائیہ نے انڈین ایئر فورس کے 2 جہاز مار گرئے اور ایک پائلٹ ونگ کمانڈر ابھینندن کو گرفتار کرلیا جسے پاکستان کی چائے بہت پسند آئی تھی۔

مزید :

بین الاقوامی -