خاتون مسافر نے فضائی کمپنی کیخلاف ہرجانے کا دعویٰ کردیا لیکن وجہ ایسی کہ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں 

خاتون مسافر نے فضائی کمپنی کیخلاف ہرجانے کا دعویٰ کردیا لیکن وجہ ایسی کہ جان ...
خاتون مسافر نے فضائی کمپنی کیخلاف ہرجانے کا دعویٰ کردیا لیکن وجہ ایسی کہ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں 

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) اسرائیلی نژاد برطانوی خاتون نے فضائی کمپنی ایزی جیٹ کے خلاف 15ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 33لاکھ 30ہزار روپے) ہرجانے کا مقدمہ دائر کر دیا ہے جس کی وجہ ایسی ہے کہ سن کر آپ دنگ رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق اس 38سالہ خاتون کا نام میلینی وولفسن ہے جو ایزی جیٹ کی پرواز کے ذریعے اسرائیل سے برطانیہ جا رہی تھی۔ راستے میں جہاز کے عملے نے دو بار اس خاتون کو اس کی سیٹ سے اٹھا کر دوسری جگہ بٹھایا۔

میلینی کی دو بار سیٹ تبدیل کیے جانے کی وجہ یہ تھی کہ پرواز میں کچھ قدامت پرست یہودی مرد موجود تھے اور وہ کسی خاتون کے پہلو میں نہیں بیٹھنا چاہتے تھے۔ پہلی بار جہاں سے میلینی کو اٹھایا گیا وہاں بھی ایسے ہی ایک یہودی مرد نے عملے سے اسے اٹھانے کو کہا تھا اور عملے نے جہاں دوسری جگہ میلینی کو لیجا کر بٹھایا وہاں بھی ایسا ہی ایک یہودی قدامت پسند بیٹھا تھا۔ اس نے بھی خاتون کے اپنے ساتھ والی سیٹ پر آ بیٹھنے پر اعتراض کر دیا جس پر عملے نے میلینی کی وہاں سے بھی اٹھایا اور ایک تیسری سیٹ دے دی۔ میلینی نے مقدمے میں استدعا کی ہے کہ فضائی کمپنی صنفی امتیاز کی مرتکب ہوئی ہے جس پر اسے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دیا جائے اور اسے پابند کیا جائے کہ آئندہ وہ محض جنس کی وجہ سے کسی مسافر کی سیٹ تبدیل نہ کروائے۔

مزید :

برطانیہ -